لائیو اپ ڈیٹس

عام انتخابات، حکومت بنانے کی دوڑ شروع، قومی اسمبلی کی 264 نشستوں کے نتائج موصول

عام انتخابات، حکومت بنانے کی دوڑ شروع، قومی اسمبلی کی 264 نشستوں کے نتائج ...
عام انتخابات، حکومت بنانے کی دوڑ شروع، قومی اسمبلی کی 264 نشستوں کے نتائج موصول

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)عام انتخابات کی پولنگ کے بعد آج قومی اسمبلی کی 265 نشستوں کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے جن میں سے اب تک 264 نشستوں کے نتائج موصول ہو چکے ہیں جس کے مطابق سب سے آگے آزاد امیدوار ہیں جبکہ ن لیگ دوسرے اور پیپلز پارٹی تیسرے نمبر پر ہیں .

نوٹ: قومی اسمبلی میں ریزرو سیٹس ملا کر کل نشستوں کی تعداد 342 ہے کسی بھی جماعت کو حکومت بنانے کیلئے 172 نشستیں درکار ہیں، چونکہ کسی بھی پارٹی کو سادہ اکثریت نہیں مل سکی ہے جس کی بنیاد پر حکومت بنانے کیلئے سب سے اہم کردار آزاد امیدوار ادا کریں گے اور جوڑ توڑ کا سلسلہ عروج کو پہنچے گا۔

تفصیلات کے  مطابق اب تک موصول ہونے والے قومی اسمبلی کے264حلقوں کے نتائج کے  مطابق  تحریک انصاف کےحمایت یافتہ آزادامیدوار92، مکمل   آزاد امیدوار 6،مسلم لیگ ن 75، پیپلز پارٹی 54،ایم کیوایم پاکستان 17،استحکام پاکستان پارٹی 2، جے یو آئی 4، مسلم لیگ ق 3 ،بلوچستان نیشنل پارٹی 2،مجلس وحدت مسلمین پاکستان، بلوچستان عوامی پارٹی، نیشنل پارٹی،پختون خواہ نیشنل عوامی پارٹی، نیشنل پارٹی اور پاکستان مسلم لیگ ضیاء ایک ایک نشست حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئیں ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ ن 

این اے 130 سے نوازشریف کامیاب قرار

غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق این اے 130 میں نوازشریف 179،310 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ یاسمین راشد نے تگڑا مقابلہ کرتے ہوئے 104،485 ووٹ حاصل کیئے اور دوسرے نمبر پر رہیں۔

 این اے119:مریم نواز کامیاب

مریم نوازشریف نے حلقہ این اے 119 میں 83 ہزار 855 ووٹ حاصل کرتے ہوئے کامیابی سمیٹ لی ہے جبکہ پی ٹی آئی کی حمایت یافتہ آزاد میدوار شہزاد فاروق 68 ہزار 376 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 123 سے شہبازشریف کامیاب
 این اے 123 کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجے کے مطابق شہبازشریف 63 ہزار 953 ووٹ لے کرکامیاب قرار پائے جبکہ پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار افضال عظیم پاہٹ 48486 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 118 سے حمزہ شہباز کامیاب قرار

لاہور کے حلقہ این اے 118 کے تمام پولنگ سٹیشنز کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج موصول ہو گئے ہیں جن کے مطابق مسلم لیگ ن کے نائب صدر حمزہ شہبازشریف ایک لاکھ 5 ہزار 960 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ تحریک انصاف کی حمایت یافتہ آزادامیدوار عالیہ حمزہ ایک لاکھ 803 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

این اے 127: عطا تارڑ کامیاب، بلاول کو شکست

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق عطا تارڑ نے 98 ہزار 210 ووٹ حاصل کرتے ہوئے کامیابی سمیٹ لی ہے جبکہ  تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار ملک ظہیر عباس نے تگڑا مقابلہ کرتے ہوئے 82 ہزار 230 ووٹ لیے لیکن دوسرے نمبر پر رہے ۔تاہم بلاول بھٹو زرداری محض 15 ہزار 5 ووٹ ہی حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔

این اے 71

 مسلم لیگ ن کے خواجہ آصف 118,566 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ آزاد امیدوار ریحانہ ڈار نے 100,272 ووٹ حاصل کیے۔

این اے 67
 این اے 167 بہاولپور 4 کے تمام 301 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے محمد عثمان اویسی 78970 ووٹ  لےکرکامیاب ہوگئے۔ آزاد امیدوار ملک عامر یار وارن 42500 ووٹ لےکر دوسرے نمبر  پر رہے۔
این اے 135
 این اے135 اوکاڑہ1 کے تمام370 پولنگ اسٹیشنز کے غیرحتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق  مسلم لیگ ن کے ندیم عباس ربیرہ 107862 ووٹ لےکر کامیاب ہوگئے۔آزادامیدوار ملک محمداکرم بھٹی 90443  ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 58
 این اے 58 چکوال سے ن لیگ نے میدان مار لیا۔ این اے 58 چکوال کے 459  تمام پولنگ اسٹیشنز  کے غیر سرکاری و غیر حتمی نتیجے کے مطابق ن ليگ کے میجر (ر)طاہر اقبال 115974 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے۔ پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار کے ایاز امیر 102537 ووٹ حاصل کرسکے۔
این اے 55
این اے 55 راولپنڈی  کے تمام 311 پولنگ اسٹیشنز کے غیرسرکاری نتیجے کے مطابق مسلم ليگ ن کے ملک ابرار احمد 78542 ووٹ لے کر جیت گئے۔ پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار محمد بشارت راجہ 67101 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 49

این اے49 اٹک کے تمام 461 پولنگ سٹیشن کے غیر سرکاری نتیجہ کے مطابق  ن لیگ کے شیخ آفتاب احمد ایک لاکھ 19 ہزار 727 ووٹ لے کر جیت گئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار طاہر صادق ایک لاکھ 10 ہزار 230 ووٹ لینے میں کامیاب ہوئے۔

این اے 124

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق ن لیگ کے رانا مبشر اقبال 55387 لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار ضمیر جھیڈو 43594 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 155

 مسلم لیگ  ن کے صدیق خان بلوچ ایک لاکھ 17 ہزار 671 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے جبکہ  آئی پی پی کے جہانگیر ترین 71128 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ مسلم لیگ ن کے صدیق خان بلوچ نے جہانگیر ترین کو 46543 ووٹ سے شکست دی۔

این اے 124

این اے 124 سے مسلم لیگ ن کے مبشر اقبال نے 55 ہزار 387 ووٹ حاصل کرکے کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ آزاد امیدوار ضمیر جھیڈو 43 ہزار 594 ووٹ حاصل کر کے دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 120

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 120 سے ایاز صادق 68 ہزار 146 ووٹ لے کر کامیاب ٹھہرے ہیں جبکہ ان کے مد مقابل پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آ زاد امیدوار 49 ہزار 222 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 48 اسلام آباد

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 48 اسلام آباد سے ن لیگ کے حمایت یافتہ امیدوار راجہ خرم نواز 69 ہزار 699 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ علی بخاری59 ہزار 851 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے112

 این اے 112ننکانہ صاحب کے تمام 339پولنگ سٹیشنز کے غیرحتمی غیرسرکاری نتائج کے مطابق مسلم لیگ ن کی شذرا منصب کھرل ایک لاکھ 5646ووٹ لیکر کامیاب ہو گئیں، ان کے مدمقابل آزادامیدوار اعجاز شاہ 93316ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر  رہے۔

این اے 56

پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئررہنما حنیف عباسی نے راولپنڈی کے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 56 سے 96649 ووٹ حاصل کرتے ہوئے کامیابی سمیٹ لی ہے  جبکہ ان کے مدِ مقابل تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار شہریار ریاض 82613 ووٹ حاصل کر پائے،اسی حلقے سے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید بھی امیدوار تھے اور انھیں 5725 ووٹ ملے اور وہ پانچویں نمبر پر رہے، 

این اے 65

 پاکستان مسلم لیگ ن کے چوہدری نصیر عباس 90 ہزار 982 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ ان کے مد مقابل آزاد امیدوار نے وجاہت حسین شاہ 82 ہزار 411 ووٹ حاصل کیئے ، پاکستان پیپلز پارٹی کے قمر زمان قائرہ اس حلقے سے 51 ہزار 282 ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ۔

این اے 69

 مسلم لیگ ن کے ناصر اقبال بوسال ایک لاکھ 13 ہزار 285 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ ان کی مخالف آزاد امیدوار کوثر پروین ایک لاکھ 8 ہزار 768 ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئیں ۔

این اے 70

 پاکستان مسلم لیگ ن کے چوہدری ارمغان سبحانی ایک لاکھ 23 ہزار 437 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں ،جبکہ آزاد امیدوار حافظ حامد رضاایک لاکھ 12 ہزار 117 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ۔

پاکستان پیپلزپارٹی

این اے 207، آصف زرداری کامیاب

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 207 سے آصف زرداری نے 89 ہزار 703 ووٹ حاصل کرتے ہوئے کامیابی سمیٹی جبکہ ان کے مد مقابل آزاد امیدوار سردار شیر محمد رند بلوچ 39 ہزار 546 ووٹ لینے میں کامیاب ہوئے ۔

این اے 148

این اے 148کے غیرحتمی غیرسرکاری نتائج کے مطابق سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے میدان مار لیا،یوسف رضا گیلانی نے 92ہزار 327ووٹ حاصل کئے ،تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار بیرسٹر تیمور نے 73 ہزار 219ووٹ لئے ۔

این اے 202

 این اے 202 خیرپور 1 سے پیپلزپارٹی کی نفیسہ شاہ جیت گئیں۔ تمام 305 پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے  کے مطابق نفیسہ شاہ 121756 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائیں جبکہ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کے سید غوث علی شاہ 26745 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 217

 این اے 217 ٹنڈو اللہ یار کے تمام 331 پولنگ اسٹیشنز کے غیرحتمی اور غیرسرکاری نتیجے کے تحت پیپلز پارٹی کے ذوالفقار بچانی 115000 ووٹ لے کر جیت گئے۔گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس کی راحیلہ مگسی 69900 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 199

این اے 199 گھوٹکی 2 کے تمام 365 پولنگ اسٹیشنز کے غیرحتمی اور غیرسرکاری نتیجےکے مطابق پیپلز پارٹی کے علی گوہر مہر 154832 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے۔جے یو آئی ایف کے عبدالقیوم 40204 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

 این اے 151

 این اے 151 کے 281 پولنگ سٹیشنز کا مکمل غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجہ سامنے آ گیا ہے جس کے مطابق پیپلز پارٹی کے سید موسیٰ گیلانی 79080 ووٹ لے کر کامیاب قرار پارئے ہیں جبکہ آزاد امیدوار مہربانو قریشی 71 ہزار 649 ووٹ حاصل کر کے دوسرے نمبر پر رہیں۔

این اے 201

غیر حتمی و غیر سرکاری نتیجہ کے مطابق این اے 201 سکھر سے پاکستان پیپلز پارٹی کے خورشید شاہ ایک لاکھ 20 ہزار 219 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ جے یو آئی ایف کے محمد صالح 53 ہزار 302 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 148

غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پیپلزپارٹی کے امیدوار سید یوسف رضا گیلانی نے این اے 148 سے میدان مار لیا ہے ۔  یوسف رضا گیلانی نے 92 ہزار 327 ووٹ حاصل کیے ، دوسرے نمبر تحریک انصاف کے حمایت یافتہ بیرسٹر تیمور 73 ہزار 219 ووٹ لیے جبکہ مسلم لیگ ن کے احمد حسن ڈیہڑ 63 ہزار 115 ووٹ لیکر تیسرے نمبر پر رہے ۔ 

این اے 208

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے 208  سےپیپلزپارٹی کے سید غلام مصطفیٰ شاہ نے 125352 ووٹ حاصل کیے ، ان کے مدمقابل جی ڈی اے  کے امیدوارسید زین العابدین نے 58714 ووٹ حاصل کیے۔ آزاد امیدوار سید غلام علی شاہ 4845 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 52 گوجرخان

این اے 52 سے رہنما پیپلزپارٹی اور سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف اپنی نشست جیتنے میں کامیاب ہوگئے۔راجہ پرویز اشرف  نےایک لاکھ 12ہزار 265   ووٹ لیکر کامیابی حاصل کر لی جبکہ آزاد امیدوار راجہ طارق عزیز بھٹی91547 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار

این اے 1

 این اے 1 سے تحریک انصاف کےحمایت یافتہ آزاد امیدوار عبدالطیف 61834 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ دوسرے نمبر پر آنےو الے جے یو آئی کے سینیٹر طلحہ محمود کو 48987 ووٹ ملے۔ پیپلزپارٹی کے فضل ربی 23723 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے جبکہ مسلم لیگ ن کے افتخار الدین 20007 ووٹ لے کر چوتھے نمبر پر رہے۔

این اے 2

این اے 2 سے تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار ڈاکٹر امجد علی خان 88938 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے ہیں، مسلم لیگ ن کے انجینئر امیر مقام37764 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے جبکہ جے یو آئی کے عبدالغفور 15522 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے ۔  

این اے 3

 این اے 3 سوات کے تمام 309 پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیرسرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار سلیم رحمان 81411 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے جبکہ مسلم ليگ ن کے واجد علی خان 27861 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 4

این اے 4 کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار سہیل سلطان 88009 ووٹ لے کرکامیاب ہوگئے، اے این پی کےمحمد سلیم خان 20890 ووٹ لے کر دوسرے، تحریک انصاف پارلیمنٹرین کے امیدوار سابق وزیر اعلیٰ محمود خان 16813 ووٹ لے کر تیسرے جبکہ جمعیت علما اسلام کے رحیم اللہ 15337 ووٹ لے کر چوتھے نمبر پر رہے۔ 

این اے 9 

غیرحتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق  مالاکنڈ کے حلقے  این اے 9 سے تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار  113513 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں، پیپلزپارٹی کے سید احمد علی شاہ40740 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں، جمیعت علما اسلام کے امیدوار مفتی کفایت اللہ 16767 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر آئے۔

این اے 10
 غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار گوہر علی خان 110023ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ عوامی نیشنل پارٹی کے عبدالروف 30302 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے، جماعت اسلامی کے بخت جہاں خان 26106ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے۔ 

این اے 11

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق حلقہ این اے 11 سے مسلم لیگ ن کے امیدوار امیرمقام 59863 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار سید فرین خان 54311ووٹ لے کر دوسرے نمبر رہے جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے اورنگزیب 10333 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے۔ 

این اے 18

 این اے 18 ہری پور سے پاکستان تحریک انصاف کے جنرل سیکریٹری عمر ایوب 192948ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں، ان کے مدمقابل مسلم لیگ ن کے امیدوار بابر نواز خان 112389 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ 

این اے20

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق شیرام خان ترکئی این اے 20 صوابی سے 122965 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے، ان کے مدمقابل عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار وارث خان 47535ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ جے یو آئی کے عبدالرحیم خان 19528ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 23

این اے23 مردان سے کامیاب ہونے والے امیدوار علی محمد خان نے 102175ووٹ حاصل کیے۔ ان کے مدمقابل عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار احمد خان 33910 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ جے یو آئی کے کلیم اللہ خان 32655 ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے

این اے 25

 این اے25 چارسدہ سے پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار فضل محمد خان 100713 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے، عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار ایمل ولی خان 67876 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے جبکہ جے یو آئی کے مولانا محمد علی گوہر 32871ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے ۔

 این اے 44

حلقہ این اے 44 ڈیرہ اسماعیل خان کے تمام 358 پولنگ اسٹیشنز کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار علی امین خان گنڈا پور 92612 ووٹ لے کرکامیاب ہو گئے جبکہ جے یو آئی ف کے مولانا فضل الرحمان 59364 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 13

 این اے 13 بٹگرام کے تمام 278 پولنگ اسٹیشنز کے مکمل غیرسرکاری و غیر حتمی نتائج کے تحت پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار محمد نواز خان 24686 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ راہ حق پارٹی کےعطا محمد 18130 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 15

این اے 15مانسہرہ کم تورغرہ کے تمام 550پولنگ سٹیشنز کے غیرحتمی غیرسرکاری نتائج کے مطابق آزادامیدوار شہزادہ محمد گشتاسپ خان 105249ووٹ کر کامیاب ہو گئے جبکہ مسلم لیگ (ن )کے قائد میاں نوازشریف 80382ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔
 

این اے 17

این اے17 ایبٹ آباد2 کے تمام 324 پولنگ اسٹیشنز کے غیرحتمی غیرسرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار علی خان جدون 97177 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔مسلم ليگ ن کے محبت خان اعوان 44522 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 21

 پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ امیدوار ماجد علی حلقہ این اے 21 مردان سے کامیاب ہوگئے۔ انہوں نے 116،049ووٹ حاصل کیے جبکہ جے یو آئی ف کے امیدوار اعظم خان 60،373 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

 این اے 30

این اے 30 پشاور کے 267 پولنگ اسٹیشنز میں سے267 کے غیرحتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی حمایت یافتہ آزاد امیدوار شاندانہ گلزار خان کامیاب قرار پائیں۔ شاندانہ گلزار 78971 ووٹ لے کر کامیاب ہوئیں جب کہ جمعیت علماء اسلام کے ناصر خان 20950 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 78

 پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار محمد مبین عارف 106169 ووٹ لے کر جیت گئے,مسلم لیگ (ن) کے رہنما خرم دستگیر اپنی قومی اسمبلی کی نشست ہار گئے۔خرم دستگیر کو گوجرانوالا میں مضبوط لیگی امیدوارتصور کیا جاتا ہے، تاہم این اے 78 کے تمام 319 پولنگ اسٹیشنز کے فارم 47 کے سرکاری نتیجے کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار محمد مبین عارف 106169 ووٹ لے کر جیت گئے۔خرم دستگیر خان 88308 ووٹ حاصل کرسکے۔

 این اے 121

این اے 121 لاہور کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق پی ٹی آئی حمایت یافتہ آزاد امیدوار وسیم قادر 78803 ووٹ کامیاب قرار پائے۔مسلم لیگ ن کے روحیل اصغر 70597 ووٹ لےکر دوسرے نمبر پر رہے۔

 این اے 149

 این اے 149 کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدوار ملک محمد عامر ڈوگر ایک لاکھ 43 ہزار 613 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ جہانگیر خان ترین 50 ہزار 166 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ۔

 این اے 81

تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار چوہدری بلال اعجاز ایک لاکھ 13 ہزار 558 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے رہنما اظہر قیوم ناہر کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے انہوں نے کڑا مقابلہ کرتے ہوئے 95 ہزار 479 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں۔ 

این اے 182

این اے 182 کے تمام 338 پولنگ سٹیشنز کے غیر سرکاری نتائج موصول ہو گئے ہیں جس کے مطابق آزاد امیدوار اویس حیدر جھکڑ ایک لاکھ 9 ہزار 751 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے محمد ثقلین بخاری 78 ہزار 6 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے ۔

 صوابی.  این اے 19 

غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار اسد قیصر 115635 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ  جمعیت علماء اسلام ف کے امیدوار مولانا فضل علی حقانی  45567  ووٹوں کے ساتھ دوسری پوزیشن پر رہے ۔

این اے 26

این اے 26 مہمند سے آزاد امیدوار  ساجد خان 41 ہزار 489 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے جبکہ جے یو ائی کے محمد عارف 19 ہزار 930 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے122، سعد رفیق کو شکست،

غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے 122 سے سردار لطیف خان کھوسہ ایک لاکھ 17 ہزار 109 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ سعد رفیق 77 ہزار 907 ووٹ ہی لینے میں کامیاب ہوئے ۔

 این اے 90

غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے 90 سے پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ امیدوار عمیر خان نیازی ایک لاکھ 79 ہزار 820 ووٹ لے کر کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ ن لیگ کے عمیر حیات روکھڑی51 ہزار 223 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 6میں امیر جماعت اسلامی کو اپ سیٹ شکست

 لوئر دیر کے حلقہ این اے 6 سے تحریک انصاف کے حمایت یافتہ امیدوار محمد بشیر خان 76259 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق 52 ہزار 545 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 156

این اے 156بورے والا کے غیرحتمی غیرسرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدوار عائشہ نذیر جٹ ایک لاکھ 19ہزار 820ووٹ لیکر کامیاب ہو گئیں جبکہ مسلم لیگ( ن) کے نذیراحمد آرائیں 90ہزار 353ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 100

مطابق فیصل آباد کے حلقہ این اے 100(NA-100 ) سے مسلم لیگ (ن )پنجاب کے صدر اور سابق وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کو شکست کا سامنا ہوا ہے ۔ غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے 100 سے پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار نثار جٹ 131969 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے ہیں جبکہ رانا ثنا اللہ 112430 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر  رہے۔ 

این اے 175

مظفر گڑھ کے حلقے این اے 175 سے پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار جمشید دستی کامیاب ہوگئے ہیں۔غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق جمشید دستی نے113253 ووٹ حاصل کیے جبکہ ان کے مدمقابل پیپلزپارٹی کے امیدوار مہر ارشاد احمد خان نے71997 ووٹ حاصل کیے۔ 

این اے 7

 این اے 7 لوئر دیر کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق آزاد امیدوار محبوب شاہ   84 ہزار 843 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے اور جماعت اسلامی کے محمد اسماعیل 31 ہزار 133 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

 این اے 31

این اے 31 پشاور سے آازاد امیدوار شیرعلی ارباب 50 ہزار 722 ووٹ ل لیکر کامیاب ہوئے۔ پیپلز پارٹی کے ارباب عالمگیر 17 ہزار 457 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پرہے۔

  این اے 33

غیرحتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق این اے 33 نوشہرہ سے آزاد امیدوار سید شاہ احدعلی شاہ 93 ہزار429 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے جبکہ پی ٹی آئی پارلیمنٹرین کے پرویز خٹک 26 ہزار 574 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

  این اے 36

غیرحتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے 36 ہنگو   سے آزاد امیدوار یوسف خان 73 ہزار 76 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے۔ جے یو ائی کے عبید اللہ 34 ہزار 324 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

 این اے 38

این اے 38 کرک سے آزاد امیدوار شاہد احمد خٹک ایک لاکھ 18 ہزار 56 ووٹ لیکر کامیاب ہوئے۔  جے یو ائی کے شاہ عبدالعزیز 49 ہزار 965 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پررہے۔

 استحکام پاکستان پارٹی

این اے 128

این اے 128 کے غیر حتمی غیرسرکاری نتائج کے مطابق  آئی پی پی کے عون چودھری ایک لاکھ 72ہزار 576ووٹ لیکر کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ ان کے مدمقابل آزاد امیدوار سلمان اکرم راجہ ایک لاکھ 59ہزار 24ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے ۔

این اے 48

 این اے 48 اسلام آباد سے پاکستان استحکام پارٹی کے نامزد آزاد امیدوار راجہ خرم نواز 89699 لے کر کامیاب ہوئے۔ پاکستان تحریک انصاف کے نامزد امیدوار علی بخاری کو 59851 ووٹ حاصل ہوئے۔

مسلم لیگ ق

این اے 64 کے  غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے تحت مسلم لیگ (ق) کے صدر چوہدری شجاعت حسین کے بیٹے چوہدری سالک حسین نے ایک لاکھ 5 ہزار 205 ووٹ حاصل کئے جبکہ قیصرہ الہیٰ نے 80 ہزار 946 ووٹ لے سکیں۔

این اے 165

پاکستان مسلم لیگ ق کے طارق بشیر چیمہ این اے 165 بہاولپور  سے کامیاب ہوگئے۔

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق طارق بشیر چیمہ 116554 ووٹ لیکر کامیاب قرارپائے،ان کے مقابلے میں آزاد اُمیدوار  چودھری سعود مجید 105313 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

ایم کیوایم

این اے 248

غیرحتمی غیرسرکاری نتائج کے مطابق قومی اسمبلی کے حلقے این اے 248 کراچی سنٹرل 2 سے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سربراہ خالد مقبول صدیقی کامیاب ہوگئے۔361 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج سامنے آگئے ہیں۔

ایم کیو ایم پاکستان کے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی 71 ہزار 536 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ اُن کے مقابل آزاد امیدوار ارسلان خان 58 ہزار 246 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔

این اے 244

ایم کیو ایم پاکستان کےسینئر ڈپٹی کنوینر فاروق ستار5سال بعد اسمبلی میں قدم رکھیں گے، انہوں نے این اے 244  سے جیت اپنے نام کرلی ہے۔کراچی ویسٹ 1 کے تمام 129 پولنگ سٹیشنز  کے غیر حتمی غیر سرکاری نتیجے کے مطابق متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے ڈاکٹر محمد فاروق ستار 20048 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔آزاد امیدوار آفتاب جہانگیر 14073 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

این اے 242

این اے 242 کراچی کیماڑی  کے تمام 286 پولنگ اسٹیشنز  کے غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج کے تحت مصطفیٰ کمال  نے 71767 ووٹ حاصل کیے ہیں۔پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار دوا خان صابر 53759 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔

جمعیت علما اسلام ف

این اے 28

غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق این اے28 پشاور سے جے یو آئی کے نور عالم خان نے 138983 ووٹ حاصل کیے ۔ ان کے مدمقابل تحریک انصاف کے حمایت آزاد امیدوار ساجد خان 65119 ووٹ حاصل کیے جبکہ پیپلزپارٹی کے کرامت اللہ نے 14830 ووٹ حاصل کیے ۔