حکومت کی بہترسیاسی و معاشی پالیسیوں کی بدولت سٹاک مارکیٹ میں بہتری آئی

حکومت کی بہترسیاسی و معاشی پالیسیوں کی بدولت سٹاک مارکیٹ میں بہتری آئی

لاہور(کامرس رپورٹر)؛لاہور سٹاک ایکسچینج کے سابق چیئرمین عاصم ظفرنے کراچی سٹاک مارکیٹ کا 100انڈیکس 33ہزار پوائنٹس عبور کرنے کو حکومت کی سیاسی،معاشی اور اقتصادی پالیسیوں کو قرار دیا ہے اور کہا کہ پارلیمنٹ میں دہشت گردی کے خاتمے کیلئے 21ویں آئینی ترمیم کی منظوری سے فوجی عدالتوں کا قیام،ملک میں سیاسی استحکام ،پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں کمی اور وزیراعظم کے بحرین کے کامیاب دورے کے باعث سٹاک مارکیٹ میں تیزی کی نئی لہر آئی ہے جس کے باعث سٹاک مارکیٹ کا انڈیکس 33ہزار پوائنٹس کی حد کو عبور کر گیا ہے ۔ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ دہشت گردی کے خلاف پوری قوم اور سیاسی جماعتوں کا متحد ہو جانے کو ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں نے خوش آئند قرار دیا ہے جس کی وجہ سے سٹاک مارکیٹ میں نئی سرمایہ کاری شروع ہو گئی ہے ۔فارن فنڈز نے بھی پاکستان میں باقاعدہ سرمایہ کاری شروع کر دی ہے ۔ انہیں پاکستان میں سیاسی استحکام نظر آ رہا ہے ۔بجلی ،کرایوں،پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی سے صنعتوں کی پیداواری لاگت میں کمی ہو رہی ہے جس کے باعث سٹاک مارکیٹ میں لسٹنگ کمپنیوں کا اس سال منافع زیادہ آنے کی امید ہے ۔انہوں نے کہا کہ شرح سود کم ہونے کی وجہ سے سرمایہ کار بینکوں میں پیسہ رکھنے کی بجائے سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں جس کے باعث بھی سٹاک مارکیٹ میں بہتری ہو رہی ہے ۔حکومت کی معاشی پالیسیوں کے نتیجے میں توانائی،سیمنٹ،کھاد اور ٹیکسٹائل سیکٹرز کی کمپنیوں کی کارکردگی بہتر ہوئی اور ان کا منافع بڑھ رہا ہے ۔بڑے سرمایہ کاروں کے علاوہ چھوٹے سرمایہ کار بھی سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں ۔

عاصم ظفر نے کہا کہ رواں سال پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا رجحان رہا تو پاکستان کی معیشت تیزی سے ترقی کرنے والے ممالک میں شامل ہو جائے گی اور سٹاک مارکیٹ میں مزید تیزی آئے گی ۔لاہور سٹاک ایکسچینج کے سابق ڈائریکٹر اور سینئر ممبر جاوید اقبال نے کہا کہ وزیراعظم محمد نوازشریف کی جانب سے دہشت گردی کے خلاف کئے گئے اقدامات،پارلیمنٹ میں دہشت گردی کے خلاف متفقہ طور پر 21ویں آئینی ترمیم کی منظوری،پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی،وزیراعظم کا درہ بحرین اور سیاسی استحکام پیدا ہونے کے باعث سٹاک مارکیٹ میں تیزی آئی ہے ۔پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ کراچی سٹاک مارکیٹ کا 100انڈیکس 33ہزار پوائنٹس کی تاریخی حد کو عبور کر گیا ہے جو اس بات کو ظاہر کرتا ہے کہ ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کا سٹاک مارکیٹ پر اعتماد بڑھ گیا ہے جس کی بنیادی وجہ حکومت کی معاشی پالیسیوں میں تسلسل قائم رکھنا اور ملک میں دہشت گردی کے خاتمے کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کے اتفاق رائے سے فوجی عدالتوں کا قیام ہے ۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کاروبار دوست حکومت ہے جس کی وجہ سے سرمایہ کاروں کا اعتماد بڑھا ہے ۔حکومت کی جانب سے توانائی کے بحران کو دور کرنے،بجلی کی پیداوار بڑھانے کیلئے مختلف منصوبوں کا قیام اور دہشت گردی کے خاتمے کیلئے ٹھوس فیصلوں کی وجہ سے سٹاک مارکیٹ میں نئی سرمایہ کاری آ رہی ہے ۔بینکوں کی جانب سے شرح سود میں کمی کے باعث بھی سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری آ رہی ہے ۔فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر میاں محمد ادریس نے کراچی سٹاک مارکیٹ کا100انڈیکس 33ہزار پوائنٹس عبور کرنے کو حکومت کی تاریخ ساز کامیابی قرار دیا اور کہا کہ21 ویں آئینی ترمیم کے ذریعے فوجی عدالتوںکا قیام ،وزیراعظم کا کامیاب دورہ بحرین ،پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں کمی اور معاشی پالیسیوں کے نیجے سے سٹاک مارکیٹ میں تیزی آئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ فوجی عدالتوں کے قیام سے د دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئے گی ۔ ملک میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہو گی اور دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے میں بھر پور مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میںامن و امان کی بہتری سے ملکی اور عالمی سطح پر صنعتکاروں اور سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال ہوگا اور کاروبار دوست ماحول اور غیر ملکی سرمایہ کاری سے ہماری معیشت ترقی کی راہ پر تیزی سے گامزن ہو گی ۔ میاں ادریس نے کہا کہ مستحکم اور اچھی معاشی حالات سے ملک میں سماجی سطح پر معاشی مسائل بھی حل ہونگے اور انصاف کے تقاضے بھی کم وقت میں پورے ہو نگے ۔لاہور ایوان صنعت و تجارت کے سابق سینئر نائب صدر عبدالباسط نے کہا کہ سٹاک مارکیٹ کا 33ہزار پوائنٹس کی حد عبور کر جانا حکومت کی معاشی پالیسیوں اور دہشت گردی کے خلاف پوری قوم کے متحد ہونے کا نتیجہ ہے ۔اس وقت پاکستان سرمایہ کاری کے لحاظ سے سب سے زیادہ پرکشش ملک ہے کیونکہ یہاں کی سٹاک مارکیٹ دنیا کی تمام سٹاک مارکیٹوں کی نسبت زیادہ منافع دے رہی ہے ۔وزیراعظم محمد نوازشریف کے سیاسی تدبر،فہم و فراست اور تمام سیاسی جماعتوں کے اتفاق رائے سے پارلیمنٹ میں 21ویں آئینی ترمیم کی منظوری سے فوجی عدالتوں کے قیام سے یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ اب ملک سے دہشت گردی کا خاتمہ ہو گا۔امن و امان قائم ہو گا جس کے ملکی معیشت اور سٹاک مارکیٹ پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے ۔وزیراعظم کا حالیہ دورہ بحرین،توانائی کے بحران کو دور کرنے کیلئے اقدامات اور معاشی پالیسیوں میں بہتری سے بھی سٹاک مارکیٹ میں تیزی آئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملکی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کا حکومت پر اعتماد بحال ہونے سے بھی سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاری ہو رہی ہے ۔پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتیں کم ہونے سے صنعتی پیداواری لاگت میں کمی سے نہ صرف مہنگائی میں کمی ہو گی بلکہ کمپنیوں کے منافع میں اضافہ ہونے سے سٹاک مارکیٹ میں مزید بہتری آئے گی۔

مزید : کامرس