انڈیکس 281.52 پوائنٹس اضافہ سے تاریخ کی نئی بلند سطح پر پہنچ گیا

انڈیکس 281.52 پوائنٹس اضافہ سے تاریخ کی نئی بلند سطح پر پہنچ گیا

  



کراچی(اے پی پی) کراچی اسٹاک ایکسچینج (کے ایس ای) میں زبردست تیزی کا رجحان برقرار رہا، کے ایس ای 100 انڈیکس مزید 281.52 پوائنٹس کے اضافہ سے تاریخ کی نئی بلند ترین سطح 33117.47 پوائنٹس پر بند ہوا۔ تفصیلات کے مطابق کاروباری ہفتہ کے چوتھے روز جمعرات کو کراچی اسٹاک ایکسچینج میں حصص کی خرید و فروخت میں زبردست تیزی کا رجحان برقرار رہا اور کے ایس ای 100 انڈیکس 32900، 33000 اور 33100 پوانٹس کی تین بالائی نفسیاتی حدیں عبور کرتے ہوئے مزید 281.52 پوائنٹس کے اضافہ سے تاریخ کی نئی بلند ترین سطح 33117.47 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای 100 انڈیکس گذشتہ کاروباری روز بدھ کو بھی 167.22 پوائنٹس کے اضافہ سے 32835.95 پوائنٹس پر بند ہوا تھا۔ کراچی اسٹاک ایکسچینج کی ممبر کمپنی عارف حبیب لمیٹڈ کے چیف ایگزیکیٹو آفیسر شاہد علی حبیب کے مطابق کراچی اسٹاک ایکسچینج میں فارن انسویسٹمنٹ میں بڑھوتری کے رجحانات اور رواں ماہ جنوری کے تیسرے ہفتہ میں اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جاری ہونے والی مانیٹری پالیسی میں ڈسکاﺅنٹ ریٹ میں مزید کمی کی توقع کی وجہ سے کے ایس ای 100 انڈیکس سمیت تقریباً تمام انڈیکس تیزی کی جانب گامزن ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ حکومت کی بہتر پالیسیوں اور ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر ایک مرتبہ پھر 15 ارب ڈالر سے تجاوز کر جانے سے بھی کراچی اسٹاک مارکیٹ میں مثبت اثرات کے رجحانات میں اضافہ ہوا ہے، کے ایس ای 100 انڈیکس 33 ہزار پوائنٹس سے بھی تجاوز کر گیا ہے۔

جمعرات کو کے ایس ای 30 انڈیکس بھی 187.47 پوائنٹس کے اضافہ سے 21478.93 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مزید برآں کے ایس سی آل شیئر انڈیکس میں 204.65 پوائنٹس کی تیزی رونماءہوئی جبکہ کے ایم آئی 30 انڈیکس میں 393.47 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ دریں اثناءبینکس ٹریڈ ایبل (بی اے ٹی آئی) انڈیکس 65.12 پوائنٹس کی مندی سے 18485.09 پوائنٹس پر بند ہوا تاہم آئل اینڈ گیس ٹریڈ ایبل (او جی ٹی آئی) انڈیکس 280.17 پوائنٹس کی تیزی سے 18164.13 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مارکیٹ میں مجموعی طور پر 377 کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جن میں سے 200 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 154 کمپنیوں کے حصص کے بھاﺅ میں مندی اور 23 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ سب سے زیادہ تیزی نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی جس کے حصص کی قیمت 497.74 روپے کے اضافہ سے 10452.55 روپے پر بند ہوئی۔ اسی طرح باٹا پاکستان کے حصص کی سودے بھی 180 روپے کی تیزی سے 3780 روپے پر بند ہوئے۔ سب سے زیادہ مندی رفحان میز پروڈکٹس اور میچلز فروٹس کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی۔ رفحان میز پروڈکٹس کے حصص کی قیمت 45 روپے کی مندی سے 10500 روپے اور میچلز فروٹس کے حصص کی قیمت بھی 40.37 روپے کی کمی سے 767.03 روپے رہ گئی۔ سب سے زیادہ کاروبار این آئی بی بینک لمیٹڈ کے حصص میں ہوا جو 1 کروڑ 73 لاکھ 17 ہزار 500 شیئرز رہا جس کی قیمت 2.33 روپے سے شروع ہو کر 2.60 روپے پر بند ہوئی۔ مجموعی طور پر 27 کروڑ 30 لاکھ 98 ہزار 350 حصص کا کاروبار ہوا جس کا تجارتی حجم 15 ارب 7 کروڑ 31 لاکھ 80 ہزار 200 روپے رہا۔ مارکیٹ کیپیٹل 75 کھرب 30 ارب 84 کروڑ 2 لاکھ 64 ہزار 336 روپے سے بڑھ کر 75 کھرب 95 ارب 54 کروڑ 77 لاکھ 27 ہزار90 روپے ہو گیا۔ فیوچر ٹریڈنگ میں 132 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 12 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں مندی اور 2 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا جبکہ 2 کروڑ 81 لاکھ 88 ہزار 500 حصص کا کاروبار ہوا۔

(kh/tam/aam1820:15)

مزید : کامرس


loading...