ایڈیشنل سیشن جج نے والدکیجانب سے دائر حبس بے جاءکی درخواست خارج کر دی

ایڈیشنل سیشن جج نے والدکیجانب سے دائر حبس بے جاءکی درخواست خارج کر دی

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج شاہدہ سعید نے زبردستی 3بچوں کو ماں کی جانب سے حبس بے جا میں رکھے جانے کی والد کی طرف سے دائرحبس بے جا کی درخواست خارج کرتے ہوئے بچے ماں کے پاس رکھنے کا حکم دے دیا ہے۔عدالت میں درخواست گزار شفیق نے مو¿قف اختیار کررکھا تھا کہ اس کی بیوی سلمی بی بی کا کردار ٹھیک نہیں ہے اور 3بچے 14سالہ علی محسن، 12سالہ عدیل اور10سالہ عائشہ کو بھی اس نے زبردستی اپنی تحویل میں رکھا ہوا ہے لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ بچوں کو باپ کے حوالے کرنے کا حکم دیا جائے ،عدالتی حکم پر پولیس نے بچوں اور ماں کو عدالت کے روبرو پیش کردیا جہاں پر بچوں کی ماں نے موقف اختیار کیا کہ اس کی شادی شفیق سے 14سال قبل ہوئی تھی جس کے کچھ ہی عرصہ بعد اس نے خرچہ دینا بھی بند کردیا تھا اور اس نے غیر عورتوں سے تعلقات بھی استوار کررکھے تھے جس کی وجہ سے 2سال قبل اس نے علیحدگی اختیار کرلی تھی ،عدالت نے وکلاءکے دلائل سننے کے بعد بچوں کو ماں کی تحویل میں رکھنے کا حکم دیتے ہوئے باپ کی جانب سے دائر حبس بے جا کی درخواست خارج کردی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4