بجلی کا پھر بڑا بریک ڈاؤن، ملک اندھیرے میں ڈوب گیا، کاروبارِ زندگی معطل

بجلی کا پھر بڑا بریک ڈاؤن، ملک اندھیرے میں ڈوب گیا، کاروبارِ زندگی معطل

لاہور(کامرس رپورٹر)ملک میں ایک مہینے میں دوسری بار بجلی کا بڑا بریک ڈاؤن ، پورا ملک اندھیرے میں ڈوب گیا اور ہر طرح کی سرگرمیاں معطل ہو گئیں ۔ پانچ گھنٹے کے بعد بحالی کا کام مرحلہ وار شروع ہوا ۔ رات گئے تک مکمل بحالی نہیں ہو سکی دیہی علاقے بجلی سے محروم رہے ۔ بحالی کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد شارٹ فال زیادہ ہونے کے باعث جن علاقوں میں بجلی بحال ہوئی ان میں بھی ہر آدھے یا ایک گھنٹے کے بعد دو سے تین گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز صبح پانچ بجے دھند اور نمی کے باعث گدو دادو کی پانچ سو اور دوسو کے وی کی ٹرانسمیشن لائنیں ٹرپ کر گئیں ۔ جس کے باعث فوری طور پر گدو پاور جنریشن پلانٹ بند ہو گیا ۔ لوڈ بڑھنے پر فوری طور پر منگلا اور تربیلا پاور پلانٹ بھی ٹرپ کر گئے ۔ اس صورتحال کے باعث ملک کے چاروں صوبوں میں بجلی بندش ہو گئی اور چاروں صوبوں کے تمام علاقے اندھیرے میں ڈوب گئے ۔ این ٹی ڈی سی کی جانب سے بحالی کا کام فوری طور پر کئے جانے کے باعث بجلی کی بحالی کا عمل پانچ گھٹنے بعد مرحلہ وار شروع ہوا ۔ رات تک صرف سسٹم میں چار ہزار میگاواٹ آ سکی جبکہ پانچ ہزار میگا واٹ کا شارٹ فال برقرار ہے ۔ رات گئے تک منگلا اور تربیلا کی پیداوار سسٹم میں نہ آسکی ۔ این ٹی ڈی سی کے ترجمان کے مطابق کراچی ، حیدر آباد اور بلوچستان کے بڑے شہروں کی بجلی دوپہر تک بحال کر دی گئی تھی ۔ شام پانچ بجے کے قریب اسلام آباد کی بجلی بھی بحال کر دی گئی ۔ رات سات بجے تک لاہور کی 80 فیصد ، ملتان کی 60 فیصد ، فیصل آباد ، گوجرانوالہ ، سیالکوٹ ، وزیر آباد میں جزوی بجلی بحال ہوئی ۔ ترجمان کے مطابق تمام بڑے شہروں کی بجلی بحال کر دی گئی ہے جبکہ پیداوار میں اضافہ پر دیہی علاقوں کی بجلی بھی بحال کر دی جائے گی ۔ دوسری جانب طویل بندش کے بعد جن علاقوں میں بجلی بحال ہوئی ان علاقوں میں بعد ازاں بدترین لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا۔

مزید : صفحہ اول