احمد شفیق مصر میں صدارتی انتخابات کی دوڑ سے دست بردار

احمد شفیق مصر میں صدارتی انتخابات کی دوڑ سے دست بردار

ہرہ(این این آئی)مصرکے ریٹائرڈ جنرل اور سابق وزیراعظم احمد شفیق نے کہا ہے کہ وہ رواں سال ہونے والے صدارتی انتخابات میں حصہ نہیں لیں یہ میرا حتمی اور آخری فیصلہ ہے۔عرب ٹی وی کے مطابق اپنے ایک بیان میں احمد شفیق نے کہا کہ عظیم مصری قوم میں نے پیارے وطن واپسی کا فیصلہ کیا ہے تاکہ میں متحدہ عرب امارات میں اپنے قیام کے دوران موقف کی وضاحت کروں۔ پانچ سال میں اپنے ملک سے دور رہا اس لیے یہاں کے بہت سے حالات کو باریکی سے نہیں دیکھ سکا۔ مجھے صحیح اندازہ نہیں تھا کہ وطن عزیز کس طرح آگے بڑھ رہا اور ترقی کی منزلیں طے کرہا ہے۔ یہ درست ہے کہ دہشت گردی اور انتہا پسندی کے حملوں نے مصر کمزور کیا مگر حکومت نے دہشت گردی اور انتہا پسندی دونوں کو شکست دے دی۔سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میں خود کو 2018ء میں ہونے والے صدارتی انتخابات کا اہل نہیں سمجھتا۔ میں چاہتا ہوں کہ ملک اسی طرح ترقی کرتا رہے۔

خیال رہے کہ متحدہ عرب امارات میں قیام کے دوران احمد شفیق نے مصر میں صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد وہ خبروں کا مرکز بن گئے تھے اور ملک میں ایک نئی بحث چل پڑی تھی۔گذشتہ ماہ وطن واپسی کے بعد انہوں نے اپنی جماعت کے لوگوں سے رواں سال ہونے والے صدارتی انتخابات میں حصہ لینے سے متعلق صلاح مشورہ کیا تاہم ان کی جماعت مصر نیشنل موومنٹ کسی نتیجے تک نہیں پہنچ پائی تھی۔

مزید : عالمی منظر