’’امیر شریعت کانفرنس‘‘ کے انتظامات کے حوالے سے رابطہ کمیٹی کا اجلاس

’’امیر شریعت کانفرنس‘‘ کے انتظامات کے حوالے سے رابطہ کمیٹی کا اجلاس

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)تحریک آزادی اور تحریک ختم نبوت میں سید عطاء اللہ شاہ بخاری کے کردار کے حوالے سے 9مارچ جمعۃ المبارک کو بعد نماز مغرب ایوان اقبال ایجرٹن روڈ لاہور میں ہونے والی ’’امیر شریعت کانفرنس‘‘ کے انتظامات کے لئے بنائی گئی کانفرنس رابطہ کمیٹی کا اجلاس گزشتہ روز مجلس احراراسلام پاکستان کے نائب امیر سید محمد کفیل بخاری کی صدارت میں مرکزی دفتر نیو مسلم ٹاؤن لاہور میں منعقد ہوا جس میں مجلس احراراسلام پاکستان کے سیکرٹری جنرل عبداللطیف خالد چیمہ اور کانفرنس رابطہ کمیٹی کے سربراہ میاں محمد اویس نے دینی وقومی اور سیاسی رہنماؤں سے کانفرنس میں شرکت کے لئے رابطوں کی اب تک کی رپورٹ پیش کی اس میں جمعیت علماء اسلام کے رہنما حافظ محمد اشرف گجر اور حافظ حیدر علی نے اجلاس کے شرکاء کو بتایا کہ جمعیت علماء اسلام کی مرکزی اور صوبائی قیادت کی ہدایت پر جے یوآئی کے کارکن امیر شریعت کانفرنس میں بھر پور تعاون کرے گی۔

اور کارکن بڑی تعداد میں شریک ہوں گے سید محمد کفیل بخاری نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکی رعونت اور امریکی دھمکیوں کے ماحول میں یہ کانفرنس اینٹی سامراج قوتوں کو تقویت دے گی۔ عبداللطیف خالد چیمہ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 1953ء کے مارچ میں مال روڈ کو شہداء ختم نبوت کے خون سے لالہ زار کردیاگیا تھا ہم مارچ کے پورے مہینے کو شہداء ختم نبوت کے نام سے منسوب کرتے ہیں امسال بھی مارچ میں ملک بھر میں شہداء ختم نبوت کانفرنسوں کا جوش وخروش کے ساتھ انعقاد کیا جائیگا ۔میاں محمداویس نے بتایا کہ4مارچ کو لاہور میں سالانہ شہداء ختم نبوت کانفرنس ہوگی جس میں تمام مکاتب فکر کے سرکردہ رہنما شرکت وخطاب کریں گے اجلاس میں مجلس احراراسلام پاکستان کے مرکزی نائب ناظم قاری محمد یوسف احرار،ڈاکٹر انیف کاشر ،مولانا تنویرالحسن احرار،ڈاکٹر ضیاء الحق قمر،شبان ختم نبوت کے رہنما مولانا شفیع الرحمن،قاری محمد قاسم ،خواجہ محمد ایوب بٹ،ڈاکٹر محمد آصف ،محمد آصف جمیل،محمد صفوان یوسف،محمد قاسم چیمہ ،مہر اظہر حسین وینس،عبدالغنی،حافظ حیدر علی،مولانا محمد اشرف گجر ،محمد سرفراز معاویہ،چوہدری ثاقب افتخار،محمد زبیر،محمد اسدجہانگیراور دیگر نے شرکت وخطاب کیا۔اجلاس میں کانفرنس کیلئے مختلف کمیٹیوں کی تشکیل کی اصولی منظوری دی گئی اور طے پایا کہ فروری اور مارچ کے مہینوں میں شعور ختم نبوت بیدار کرنے کیلئے ملک گیر مہم چلائی جائے گی ۔بعدازں مجلس احراراسلام کے سیکرٹری جنرل عبداللطیف خالد چیمہ نے پریس بریفنگ میں اس امر پرخوشی کا اظہار کیا کہ وفاقی وزیر مذہبی امور نے سال2018ء کو شعور ختم نبوت کے طورپر منانے کا اعلان کیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ابھی تک اس اعلان کی عملی صورت سامنے نہیں آئی انہوں نے وفاقی وزیر مذہبی امور سے مطالبہ کیا کہ وہ اعلان کو عملی جامہ پہنانے کیلئے مناسب اقدام کرے۔ عبداللطیف خالد چیمہ نے کہا کہ حلف نامے میں ترمیم کے ایشو پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے مناسب مؤقف اختیار کیا تھا اب وزیر اعلیٰ پنجاب نے علماء کنونشن میں ناموس رسالت اور ختم نبوت کے حوالے سے جن جذبات کا اظہار کیا ہے وہ قابل ستائش ہیں لیکن ضرورت اس امر کی ہے کہ ابوبکر سمیت تمام قادیانیوں کو اہم اور کلیدی عہدوں سے علیحدہ کیا جائے اور قانون امتناع قادیانیت پر مؤثر عمل درآمد کرایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ 9مارچ کا ایوان اقبال لاہورمیں ہونے والی’’ امیر شریعت کانفرنس‘‘ دوررس اثرات کی حامل ہوگی اور تحریک ختم نبوت کو آگے بڑھانے کا موجب ہوگی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4