ایک کروڑ 80لاکھ کا فراڈ، امریکہ پلٹ شہری عدالت پہنچ گیا

ایک کروڑ 80لاکھ کا فراڈ، امریکہ پلٹ شہری عدالت پہنچ گیا

  

لاہور(نامہ نگار)35 سال بعد امریکہ سے پاکستان آنے والے اورسیزپاکستانی کو ایک کروڑ 80لاکھ روپے کی رقم سے محروم کرنے پر اوورسیز پاکستانی محمد اقبال 2ملزموں کی ضمانت کی درخواستیں خارج کروانے سیشن عدالت پہنچ گیا۔ ایڈیشنل سیشن جج عہبرگل کی عدالت میں مانگا منڈی کے اوورسیز پاکستانی محمد اقبال الحسن نے دو ملزموں مسکین اور قربان کی درخواست ضمانتیں خارج کرانے کے لئے درخواست دائرکی ہے جس پر فاضل جج نے مانگا منڈی پولیس سے دونوں ملزمان سے تفتیش کرکے رپورٹ 17جنوری کو ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ عدالت میں محمد اقبال الحسن کے وکیل نے موقف اختیار کررکھاہے کہ محمد اقبال نے 35سال امریکہ میں رہ کر محنت مزدوری کی جب وہ واپس آیا تواس نے ایک فلاحی ادارہ چلانے کے لئے مانگا منڈی میں جگہ خریدنے کے لئے برکت نامی شخص سے بات کی جس نے مسکین اور قربان سے بات کرائی جنہوں نے جعل سازی سے اس سے ایک کروڑ 80لاکھ روپے کی رقم ہتھیا لی ،تھانہ مانگا منڈی میں اس جعل سازی کا مقدمہ درج کروایا گیا لیکن پولیس نے ملزمان کو گرفتار نہیں کیا ۔بعد ازاں معلوم ہوا کہ ملزمان نے عدالت سے رجوع کر لیاہے تاہم عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ ملزمان کی درخواست ضمانت خارج کی جائے جبکہ ملزمان مسکین اور قربان کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ انہوں نے اقبال الحسن کے ساتھ فرا ڈنہیں کیا بلکہ اس کے ساتھ زمین کے لین دین کا تنازعہ چل رہا ہے۔

مزید :

علاقائی -