سی پیک کو 2018ء میں افغانستان اور وسطی ایشیا تک توسیع دی جائیگی : چینی سفیر

سی پیک کو 2018ء میں افغانستان اور وسطی ایشیا تک توسیع دی جائیگی : چینی سفیر

  

اسلام آباد (آئی این پی ) چین کے سفیر یا ؤ جِنگ نے کہا ہے کہ 2018میں سی پیک 'نئے زمانے' میں داخل ہو جائے گا اور اس کو افغانستان اور وسطی ایشیا تک توسیع دی جائے گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاک بحریہ کے سر براہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی اور سی پیک پار لیمانی کمیٹی کے سر براہ سینیٹر مشاہد حسین سید سے ملاقات کے دوران تبادلہ خیال کرتے ہوئے کیا۔ ترجمان جمان پاک بحریہ کے مطابق چینی سفیر یا ؤ جِنگ نے پاک بحریہ کے سر براہ ایڈمرل ظفر محمود عباسی سے گزشتہ روز نیول ہیڈ کوارٹرز میں ملاقات کی جس میں پاک چین بحری دفاعی تعاون کے مختلف شعبوں پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ملاقات میں نیول چیف نے خطے کے بحری امن و استحکام میں پاک بحریہ کے کردار پر روشنی ڈالی ۔ اس موقع پر چینی سفیرنے عالمی میری ٹائم سکیورٹی کے قیام میں پاک بحریہ کی کاوشوں کو سراہا اور سی پیک سے منسلکہ بحری سکیورٹی کے مختلف امور بھی موضوعِ گفتگو رہے۔ ملاقات میں ونوں ممالک کی بحری افواج کی مشترکہ آپریشنز کرنے کی صلاحیت میں مزید اضافہ کرنے پر تبادلہ خیال کیاگیا۔بعدازاں چینی سفیرپارلیمینٹ ہا ؤ س میں سی پیک پارلیمانی کمیٹی کے چیئرمین سینیٹر مشاہد حسین سے ملاقات کی ۔اس موقع پر سینیٹرمشاہد حسین نے امید ظاہر کی کہ ان کے دور میں پا ک چین تعلقات مزید مضبوط ہو ں گے اور سی پیک زیادہ تیز رفتار ترقی کرے گا ۔ اس موقع پر چینی سفیر نے سنیٹر مشاہد حسین کو چین کا پرانا دوست قرار دیا اور پاک چین تعلقات اور خاص طور پر سی پیک میں ان کے تعاون کا شکریہ ادا کیا۔

چینی سفیر

مزید :

صفحہ آخر -