بلوچستان کی پارٹیوں میں تفریق ڈالنے کی کوشش کی جا رہی ہے،طلال چودھری

بلوچستان کی پارٹیوں میں تفریق ڈالنے کی کوشش کی جا رہی ہے،طلال چودھری
بلوچستان کی پارٹیوں میں تفریق ڈالنے کی کوشش کی جا رہی ہے،طلال چودھری

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر مملکت طلال چودھری نے کہا ہے کہ بلوچستان کی پارٹیوں میں تفریق ڈالنے کی کوشش کی جا رہی ہے ،یہ نہیں ہو سکتا ن لیگ مقدمات ،اس طرح کے فیصلوں یا تحریکوں سے ہارمان لے،احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے طلال چودھری نے کہا کہ ہم اپنے اصول پر قائم رہیں گے ، نہ ڈیل کریں گے نہ ڈھیل دیں گے ،اپنے موقف پر کھڑے رہیں گے،ان کا کہناتھا کہ نواز شریف کی قیادت میں الیکشن لڑیں گے ، ہم اپنے موقف سے پیچھے نہیں ہٹیں گے ۔

وفاقی وزیر مملکت نے کہا کہ شکل دکھانے کیلئے قادری کی،پیچھے اتحاد پیپلزپارٹی اورپی ٹی آئی کاہے،یہ لوگ نہیں چاہتے کہ سینیٹ یاعام انتخابات وقت پرہوں،طلال چودھری نے کہا کہ بلوچستان میں کھیلے جانے والے کھیل کانقصان ن لیگ کونہیں پاکستان کوہوگا،انہوں نے کہا کہ عمران خان جمہوری نہیں ہیں، یہی مشرف کے ساتھی ہیں، عمران خان یہاں بھی چاہتے ہیں سسٹم نہ چلے ، طاہرالقادری کے دائیں بائیں ایک طرف پیپلزپارٹی دوسری طرف پی ٹی آئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان ہمارے جمہوری سسٹم میں بھی گھس بیٹھیا ہے اور یہ پہلا مرید ہے کہ اپنے پیر کے گھر گھس بیٹھیا بن کر گیا ہے، طلال چودھری نے کہا کہ چیئرمین پی ٹی آئی نے مرشد خانہ میں اور جم خانہ میں کوئی فرق نہیں سمجھا،خان صاحب کو معلوم نہیں کہ پیر کے گھر کیسے جاتے ہیں اور کلب کیسے جاتے ہیں،خان صاحب عجیب آدمی ہیں، انھیں کوئی اصول طریقہ پتا ہی نہیں۔

وفاقی وزیر مملکت نے کہا کہ خان صاحب اپنی پارٹی کی حالت دیکھ لیں،سینٹرل ورکنگ کمیٹی دیکھ لیں،ایک وہ چیئرمین ہے جسے شادی کا شوق ہے ،ایک نے نکاح پڑھانا ہوتا ہے،انہوں نے کہا کہ دو چار بندے پی ٹی آئی کی سینٹرل کمیٹی میں گواہ ہیں ، دو چاروہ ہیں جنھوں نے بعد میں جھوٹے بیانات دینے ہوتے ہیں کہ شادی ہوئی کہ نہیں، طلال چودھری کا کہناتھا کہ پی ٹی آئی کی یہ پوری سینٹرل ورکنگ کمیٹی ہے ، یہی پوری پارٹی ہے ، عمران خان صاحب کے افیئرز کا بھی یہ دفاع کرتے ہیں، خواتین کوعمران خان کے میسجز کا بھی یہی لوگ دفاع کرتے ہیں۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد