پارٹی صدر بنانے کیخلاف درخواست پر نوازشریف سمیت تمام فریقین سے جواب طلب

پارٹی صدر بنانے کیخلاف درخواست پر نوازشریف سمیت تمام فریقین سے جواب طلب
پارٹی صدر بنانے کیخلاف درخواست پر نوازشریف سمیت تمام فریقین سے جواب طلب

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے نوازشریف کو پارٹی صدر بنانے کیخلاف درخواست پر سابق وزیراعظم سمیت تمام فریقین سے جواب طلب کر لیا،تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نوازشریف کوپارٹی صدربنانے کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست کی سماعت ہوئی،درخواست رئیس عبدالواحد ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر کی گئی جس میں کہا گیا ہے کہ قانون سازی عوام کیلئے ہوتی ہے فرد واحد کیلئے نہیں ،نااہل شخص کو پارٹی صدر بنانا اخلاقی اور اسلامی روایات کیخلاف ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ الیکشن ایکٹ میں ترمیم کو کالعدم قرار دیا جائے۔درخواست میں نوازشریف،چیف الیکشن کمشنر،سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ،سیکرٹری کابینہ اورقانون کوبھی نوٹسز جاری کر دیئے، عدالت نے اپنے ریمارکس میں کہا ہے کہ آئندہ سماعت سے پہلے نوازشریف جواب جمع کرائیں ،عدالت نے مزید سماعت 30 جنوری تک ملتوی کر دی۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد