انسپکشن کے نام پر کسی تاجر کو ہراساں نہیں کیا جائے گا،پنجاب فوڈ اتھارٹی

انسپکشن کے نام پر کسی تاجر کو ہراساں نہیں کیا جائے گا،پنجاب فوڈ اتھارٹی

  



راولپنڈی(کامرس ڈیسک)پنجاب فوڈ اتھارٹی کے وفد نے راولپنڈی چیمبر آف کامرس کا دورہ کیا اور تاجروں کے اجلاس میں شرکت کی وفد میں ایڈیشنل ڈائریکٹرجنرل لائسنسنگ شاہد عنایت ملک، ڈائریکٹر آپریشن بدر رمیض، ڈپٹی ڈائریکٹر آپریشن نارتھ مز نوشین سرور، شامل تھے تاجروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیشنل ڈائریکٹرجنرل لائسنسنگ اینڈ رسیورسز شاہد عنایت ملک نے کہا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی کا اہم مقصد فوڈ کے بزنس سے جڑے تمام کاروبار بیکری، شادی ہالز، ریسٹورنٹس وغیرہ کو مختلف کیٹگریز میں ایک لائسنس کے اند ر لانا ہے تاکہ شفاف انداز میں مانیٹرنگ کی جاسکے، انسپکشن کے نام پر کسی تاجر کو ہراساں نہیں کیا جائے گا، اس بات کا خیال رکھا جائے گا کہ عملہ تمیز اور تہذیب کے دائرے میں رہ کر گفتگو کرے۔دوہزار بائیس کے بعد کھلے دودھ پر پابندی ہو گی تاہم دودھ کے کاروبار سے منسلک افراد کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا۔ چیمبر اور انجمن تاجران کے پلیٹ فارم سے آگاہی مہم تیز کی جائے گی۔ لائسنس رجسٹریشن کا عمل آسان بنا دیا گیا ہے۔

، شکایات کا ازالہ کیا جائے گا، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ تاجروں کی عزت نفس کا خیال رکھا جائے گا اور بے جا انسپکشن سے گریز کیا جائے گا ہم بہتری کے لیے بھی نوٹسز جاری کرتے ہیں صرف وہاں کاروباری مرکز کو سیل کیا جائے گا جہاں پر کچھ ایسا مواد ملے جو انسانی صحت کے لیے جان لیوا ہو اس سے پہلے صدر چیمبر صبور ملک نے اپنے خطاب میں کہا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی کے اقدامات سے صارفین کو تحفظ ملا ہے اور انہیں معیاری اشیا دستیاب ہو رہی ہیں تاہم تاجر برادری کو کئی تحفظات ہیں چھاپوں سے تاجر کی عزت نفس مجروع ہوتی ہے اور کاروبار کی شہرت کو نقصان پہنچتا ہے۔پنجاب فوڈ اتھارٹی کو اپنی صلاحیت میں اضافہ کرنا ہو گا جرمانے کی شرح کم کی جائے اور طریقہ کار آسان بنایا جائے آگاہی مہم کے لیے معلوماتی کتابچہ اردو زبان میں ہر کاروباری مرکز پر دیا جائے اجلاس میں سینئر نائب صدر نوشیروان خلیل، نائب صدر حمزہ سروش، گروپ لیڈر سہیل الطاف،سابق صدور، مجلس عاملہ کے اراکین، انجمن تاجران اور فوڈ اینڈ ریسٹورنٹ ایسوسی ایشن کے نمائندے اور تاجروں کی ایک کثیر تعداد بھی موجود تھی

مزید : کامرس