ڈرائیونگ لائسنس رنیول فیس میں 100 فیصد اضافہ ظلم‘ تاجر الائنس

ڈرائیونگ لائسنس رنیول فیس میں 100 فیصد اضافہ ظلم‘ تاجر الائنس

  



کراچی(این این آئی) صدرکراچی تاجر الائنس و بانی عام آدمی پاکستان ایاز میمن موتی والا نے کہا ہے کہ گڈز ٹرانسپورٹروں کی ہڑتال سے پورے پاکستان میں سبزیوں، پھلوں، اور دواؤں سمیت دیگر اشیائے ضروریہ کی قلت ہوگئی ہے، گورنر سندھ کے ساتھ مذاکرات نا کام ہونے کا مطلب یہ ہے کہ وفاقی حکومت کسی کام کی نہیں ہے، گڈز ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن، افغان ٹرانزٹ اور آل کراچی ٹائر ایسوسی ایشن کی گزشتہ دو روز سے جاری ہڑتال سے مال بردار گاڑیاں سڑکوں پر کھڑی ہیں، جس کے باعث کراچی سے پورے ملک میں گڈز سپلائی مکمل طور پر ختم ہوچکی ہے، ان خیالات کا اظہارا نہوں نے ٹرانسپورٹروں کے وفد سے ملاقات کے بعد جاری کردہ بیان میں کیا، ایاز میمن کا کہنا تھا کہ گڈز ٹرانسپورٹروں کا مطالبہ ہے کہ ڈرائیونگ لائسنس کی فیس میں سو فیصد اضافہ ناقابل قبول ہے جو ڈرائیونگ لائسنس اٹھارہ سو روپے میں رنیو ہوتا تھا اس کی فیس وفاقی حکومت نے بڑھا کر اٹھارہ ہزار روپے کر دی ہے جبکہ ایکسل لوڈ ایس آر او 2ہزار پر موٹروے پولیس عمل نہیں کر رہی۔

، ایکسل لوڈ مینجمنٹ کو موخرکر کے اوور لوڈ پر مجبور کیا جارہا ہے سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد نہیں ہورہا ہے جس سے گڈز ٹرانسپورٹروں کو روزانہ کی بنیاد پر مالی نقصان ہورہاہے، انہوں نے کہا کہ حیرانگی ہوتی ہے موجودہ وفاقی حکومت کی کارکردگی پر جس نے کوئی ایسا شعبہ نہیں چھوڑا جس کو پریشان نہ کیا، تحریک انصاف کے لوگ عوام کو تنگ و پریشان کرنے کے نئے نئے طریقے ڈھونڈتے ہیں اگر یہی توانائی وہ لوگ اپنی کارکردگی کو بہتر کرنے اور عوام کو ریلیف دینے کی پالیسیاں مرتب کرنے اور ان پر عمل درآمد کروانے میں خرچ کرتے تو کیا پتہ عوام کا بھلاہوہی جاتا، انہوں نے کہا کہ ٹرانسپورٹروں نے ملاقات میں بتایا ہے کہ ہڑتال کے باوجود وفاقی حکومت نے کے کسی نمائندے نے ہم سے کوئی رابطہ نہیں کیا ہے اور وفاقی وزیر مواصلات خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں، انہوں نے مزید کہ ٹرانسپورٹروں کی ہڑتال سے ایک دن میں کروڑوں روپے کا نقصان ہوتا ہے، نالائق وفاقی وزیر مواصلات کیوجہ سے عوا م اور ٹرانسپورٹرز کے ساتھ ساتھ ایسے غریب مزدوروں کو بھی شدید معاشی پریشانی کا سامناہے جو مال بردار گاڑیوں کی لوڈنگ اور ان لوڈنگ کر کے روزانہ کی بنیاد پر اجرت کماتے تھے۔

مزید : کامرس