جندول سب ڈویژن سمیت دیگر علاقوں میں سونامی بلین ٹری منصوبے ناکام ہونیکا انکشاف

جندول سب ڈویژن سمیت دیگر علاقوں میں سونامی بلین ٹری منصوبے ناکام ہونیکا ...

  



جندول(نمائندہ پاکستان)جندول سب ڈویژ ن سمیت دیگر علاقوں میں سونامی اور بلین ٹری کا منصوبے ناکام ہونے کا انکشاف مقامی لوگوں کو دیئے گئے لاکھوں پودوں کا نام ونشان موجود نہیں جبکہ نئے سال کے لئے محکمہ فاریسٹ نے مقامی لوگوں سے لیز پر لی گئی کروڑوں لاگت کی زمینوں پر پودوں کا زخیرہ فارم بھی بنجر نظر ارہاہے محکمہ فاریسٹ سمیت دیگر علی احکام غفلت اور خرگوش کے نیند سوگئی ہے۔تفصلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے پچھلے صوبائی حکومت نے ملک بھر میں سونامی اور بلین ٹری کے نام سے جو بڑے بڑے منصوبے شروع کی تھے جس میں لوئر دیر سمیت جندول سب ڈویژن بھی شامل تھاجس میں محکمہ فارسٹ نے مقامی لوگوں کو لاکھوں کے تعداد میں سرکاری مختلف پودہ جات دے دیا تھا جو مقامی لوگوں نے اپنے اپنے زمینوں اور پہاڑوں میں لگائے تھیں مگر خوشک سالی اورپودوں کو پانی نادینے کے وجہ سے لاکھوں کے تعداد میں پودے سوکھ گئی تھے اور انکے نام نشان نظرنہیں ارہاہے جس پر اس وقت کے حکومت وقت خاموش رہا۔ تااہم اگلے سال وزیر عظم حدایت کے مطابق محکمہ فارسٹ نے دوبارا سونامی ملین ٹری کیلئے منصوبہ بندی کیں جس میں جندول سب ڈویژن میں مقامی لوگوں سے پودے زخیرہ کرنے کیلئے سنکڑوں کنال زمینوں پر فارم لگا یا گیامحکمہ فارسٹ کے غفلت کے وجہ سے زیادہ فودوں فارمز بنجر ہوگئی ہے جس پراعلی احکام سمیت محکمہ فاریسٹ خاموش تماشائی بن ہوئے ہے مقامی لوگوں نے علی احکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیاہے

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...