یوٹیلٹی سٹورز پر وزیراعظم ریلیف پیکیج کا اطلاق نہ ہو سکا، عوام مایوس

    یوٹیلٹی سٹورز پر وزیراعظم ریلیف پیکیج کا اطلاق نہ ہو سکا، عوام مایوس

  



لاہور(این این آئی)یوٹیلٹی سٹورز پر وزیر اعظم کے ریلیف پیکیج کا اطلاق نہ ہوسکا جس کی وجہ سے عوام مایوس ہو کر واپس لوٹنے لگے، یوٹیلٹی سٹورزکی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ریلیف پیکیج کے مکمل اطلاق میں ایک سے دو روز لگ سکتے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے 7جنوری سے یوٹیلٹی سٹور زپر وزیر اعظم ریلیف پیکیج کا اطلاق کر دیاگیا ہے تاہم عملی طو رپر اس کا آغاز نہیں ہوسکا۔ ذرائع کے مطابق بیشتر سٹورز پر ریلیف پیکیج کے تحت اشیائے خوردونوش کی فراہمی ممکن نہیں ہو سکی۔ گزشتہ روزبھی یوٹیلٹی سٹورز پر جانے والے شہریوں کو مایوس ہو کر واپس لوٹنا پڑا۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت کو مکمل منصوبہ بندی کے بعداس کے آغاز کااعلان کرنا چاہیے تھا۔ یوٹیلٹی سٹورز انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ریلیف پیکیج کے تحت آٹے اور دالوں کی قیمتیں مقرر نہیں ہو سکیں جس کی وجہ سے اطلاق نہیں ہوسکا،وزیر اعظم ریلیف پیکیج کے مکمل اطلاق میں مزید ایک سے دوروز لگ سکتے ہیں۔دوسری طرف شہر میں پرچون سطح پر ٹماٹر کی قیمت ایک بار پھر 180سے200روپے فی کلو تک پہنچ گئی جبکہ دیگر سبزیوں کی قیمتوں میں بھی اضافہ دیکھا جارہا ہے، انتظامیہ کا کہنا ہے کہ کورے اور بارشوں کی وجہ سے سبزیوں کو نقصان پہنچا ہے جبکہ مکمل سپلائی نہ آنے سے بھی مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔تفصیلات کے مطابق آلو نیا کچا چھلکادرجہ اول46روپے کی 60روپے، آلو نیا کچا چھلکادرجہ دوئم 42کی بجائے55، آلو نیا کچا چھلکا درجہ سوئم 38کی بجائے 45،پیاز درجہ اول 57کی بجائے70روپے،پیازدرجہ دوئم 53کی بجائے65روپے،پیاز درجہ سوئم49کی بجائے 52سے55،ٹماٹر درجہ اول140کی بجائے190سے200روپے،ٹماٹردرجہ دوئم 130کی بجائے170سے180، ٹماٹر درجہ سوئم120کی بجائے150سے160،لہسن دیسی 264کی بجائے 290سے300،لہسن چائنہ 260کی بجائے280سے290،لہسن ایرانی157کی بجائے180،ادرک تھائی لینڈ220کی بجائے260سے270،ادرک چائنہ280کی بجائے320سے330،کھیرافارمی73کی بجائے78سے80،کریلے90کی بجائے100سے105،پالک فارمی 23کی بجائے25،میتھی46کی بجائے50سے55،بینگن 68کی بجائے75،بند گوبھی41کی بجائے45سے50،شملہ مرچ150کی بجائے170سے180،پالک دیسی 32کی بجائے35،لیموں چائنہ52کی بجائے60،بھنڈی110کی بجائے120سے130،شلجم 27کی بجائے30سے35،اروی 86کی بجائے95سے100،مٹر160کی بجائے180،مونگرے67کی بجائے75،مولی 14کی بجائے20،گاجردیسی36کی بجائے40گائنہ چائنہ52کی بجائے55سے60روپے فی کلو فروخت کی گئی۔

مہنگائی

مزید : صفحہ آخر