"ایران نے اپنے دفاع میں مناسب قدم اٹھایا ہے اور اس چھاؤنی کو نشانہ بنایا ہے جہاں . . . " امریکی اڈے پر حملے کے بعد ایرانی وزیرخارجہ ایک مرتبہ پھر بول پڑے

"ایران نے اپنے دفاع میں مناسب قدم اٹھایا ہے اور اس چھاؤنی کو نشانہ بنایا ہے ...

  



تہران(ویب ڈیسک)  ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے کہا ہے کہ جنگ یا کشیدگی نہیں بڑھانا چاہتے لیکن جارحیت کا جواب ضرور دیں گے۔

ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری بیان میں کہا امریکی اڈوں پر حملہ اقوام متحدہ کے چارٹر کی شق 51 کے تحت اپنے دفاع میں کیا۔ انہوں نے کہا ایران نے اپنے دفاع میں مناسب قدم اٹھایا ہے اور اس چھاؤنی کو نشانہ بنایا ہے جہاں سے ایرانی شہریوں اور اعلیٰ عہدیداروں پر حملہ کیا گیا تھا۔

ایرانی وزیرخارجہ نے مزید کہا کہ ہم جنگ نہیں چاہتے اور نہ ہی کشیدگی بڑھانا چاہتے ہیں تاہم کسی بھی جارحیت کی صورت میں دفاع کا حق ضرور رکھتے ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز ایران کی جانب سے عراق میں 2 فوجی اڈوں پر 12 سے زائد زمین سے زمین پر مار کرنے والے ایرانی میزائل داغے گئے تھے۔ ایران نے دعویٰ کیا تھا کہ ان حملوں میں 80 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے بھی عراق میں امریکی فوج کے اڈوں پر حملے کی تصدیق کی تھی۔ تاہم امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ ایرانی حملوں میں کوئی امریکی ہلاک نہیں ہوا۔

مزید : بین الاقوامی