سپریم کورٹ،پاکستان ریونیوو آٹومیشن پرائیویٹ لمیٹڈکی ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف درخواست پر چیئرمین ایف بی آر طلب

سپریم کورٹ،پاکستان ریونیوو آٹومیشن پرائیویٹ لمیٹڈکی ہائیکورٹ کے فیصلے ...
سپریم کورٹ،پاکستان ریونیوو آٹومیشن پرائیویٹ لمیٹڈکی ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف درخواست پر چیئرمین ایف بی آر طلب

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے پاکستان ریونیوو آٹومیشن پرائیویٹ لمیٹڈکی ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف درخواست پر پر چیئرمین ایف بی آر کو طلب کرلیا،عدالت نے اٹارنی جنرل انور منصور کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ایف بی آر اور پی آر اے ایل سے ایک ماہ میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ،سپریم کورٹ نے آئی ایس ایف کنٹینرسکیم کیس کو بھی اس کیس کے ساتھ منسلک کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پاکستان ریونیوو آٹومیشن پرائیویٹ لمیٹڈکی ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی۔دوران سماعت جسٹس اعجازالاحسن نے استفسار کیاکہ ڈیڑھ لاکھ تنخواہ لینے والے کو آپ 13 لاکھ روپے تنخواہ ادا کررہے ہیں ،وکیل نے کہاکہ کمپنی میں کام کرنے والے تمام لوگوں کو حکومت نہیں بلکہ کمپنی خود ادائیگی کررہی ہے ،چیف جسٹس گلزاراحمد نے استفسار کیاکہ ایف بی آر خود سافٹ ویئر ڈیزائن کیوں نہیں کرتا؟وکیل نے کہاکہ کمپنی صرف سافٹ ویئر ڈیزائن کرتی ہے،ڈیٹا ایف بی آر خودرج کرتا ہے ۔چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیاکہ پی آر اے ایل کی کیا ضرورت ہے ایف بی آر سافٹ ویئر خودکیوں نہیں ڈیزائن کرتا؟۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ اس معاملے کو بھی منطقی انجام تک پہنچانا ہے ،جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ آج تک آئی ایس ایف کے 1700 کنٹینرزکاکچھ پتہ نہیں چل سکا۔عدلت نے پاکستان ریونیوو آٹومیشن پرائیویٹ لمیٹڈکی ہائیکورٹ کے فیصلے کیخلاف درخواست پر پر چیئرمین ایف بی آر کو طلب کرلیا،عدالت نے اٹارنی جنرل انور منصور کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ایف بی آر اور پی آر اے ایل سے ایک ماہ میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ،سپریم کورٹ نے آئی ایس ایف کنٹینرسکیم کیس کو بھی اس کیس کے ساتھ منسلک کردیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...