سپیشل کورٹ کے فیصلے کیخلاف اپیل ہائیکورٹ نہیں سن سکتی،ہم صرف یہ دیکھ سکتے ہیں جو کارروائی شروع کی گئی وہ قانون کے مطابق تھی یا نہیں ،لاہور ہائیکورٹ کے اہم ریمارکس

سپیشل کورٹ کے فیصلے کیخلاف اپیل ہائیکورٹ نہیں سن سکتی،ہم صرف یہ دیکھ سکتے ...
سپیشل کورٹ کے فیصلے کیخلاف اپیل ہائیکورٹ نہیں سن سکتی،ہم صرف یہ دیکھ سکتے ہیں جو کارروائی شروع کی گئی وہ قانون کے مطابق تھی یا نہیں ،لاہور ہائیکورٹ کے اہم ریمارکس

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق صدرپرویز مشرف کی خصوصی عدالت کے فیصلے کیخلاف درخواست کے دوران ہائیکورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاہے کہ سپیشل کورٹ کے فیصلے کیخلاف اپیل ہائیکورٹ نہیں سن سکتی،اگرسپریم کورٹ میں ہی اپیل کی جاسکتی ہے توہائیکورٹ میں سماعت کیسے ہوسکتی ہے ،عدالت نے کہا کہ سپیشل کورٹ نے فیصلہ کن بنیادوں پر دیاہم اسے نہیں دیکھ سکتے ،ہم صرف یہ دیکھ سکتے ہیں جو کارروائی شروع کی گئی وہ قانون کے مطابق تھی یا نہیں ۔

تفصیلات کے مطابق لاہورہائیکورٹ میں سابق صدرپرویز مشرف کی خصوصی عدالت کے فیصلے کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی ،جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں فل بنچ نے سماعت کی،پرویز مشرف کی جانب سے ایڈووکیٹ اظہرصدیق پیش ہوئے،عدالت نے استفسارکیاکہ کیاپرویز مشرف کے معاملے پر انکوائری ہوئی ہے؟اٹارنی جنرل نے کہاکہ جی!اس معاملے پر ایف آئی اے نے انکوائری کی ،عدالت نے استفسار کیاکہ ایف آئی اے کی انکوائری رپورٹ میں کیاتھا؟ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہاکہ اس میں پرویز مشرف کے عمل کوغیرقانونی قراردیاگیا تھا۔

عدالت نے استفسار کیاکہ کیارپورٹ خصوصی عدالت میں پیش کی گئی ؟ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کہاکہ رپورٹ خصوصی عدالت میں پیش کی گئی ،فردجرم میں اس کا ذکر نہیں ہے،وکیل پرویزمشرف نے کہا کہ انکوائری رپورٹ کی بنیاد پر درخواست خصوصی عدالت میں بھیجی گئی ۔

عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ سپیشل کورٹ کے فیصلے کیخلاف اپیل ہائیکورٹ نہیں سن سکتی ،اگرسپریم کورٹ میں ہی اپیل کی جاسکتی ہے توہائیکورٹ میں سماعت کیسے ہوسکتی ہے ،عدالت نے کہا کہ سپیشل کورٹ نے فیصلہ کن بنیادوں پر دیاہم اسے نہیں دیکھ سکتے ،ہم صرف یہ دیکھ سکتے ہیں جو کارروائی شروع کی گئی وہ قانون کے مطابق تھی یا نہیں ۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور