ضروری نہیں کہ حکومت کے ساتھ ہر ایشو پر اختلاف ہو، ملک احمد خان نے آرمی ایکٹ ترمیم کی حمایت کرنے کی وضاحت کردی

ضروری نہیں کہ حکومت کے ساتھ ہر ایشو پر اختلاف ہو، ملک احمد خان نے آرمی ایکٹ ...
ضروری نہیں کہ حکومت کے ساتھ ہر ایشو پر اختلاف ہو، ملک احمد خان نے آرمی ایکٹ ترمیم کی حمایت کرنے کی وضاحت کردی

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)مسلم لیگ ن کے رہنما ملک احمد خان نے کہاہے کہ اگر مجھے کسی ایشو پر حکومت سے اختلاف ہے تو ضروری نہیں ہے کہ مجھے حکومت کے ساتھ ہر ایشو پر اختلاف ہو،سیاست کسی جامد چیز کا نام نہیں ہے۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”آن دا فرنٹ“میں گفتگو کرتے ہوئے ملک احمد خان نے کہا کہ شیخ رشید کی غیر سنجیدہ گفتگو اس قابل نہیں کہ اس پر بات کی جائے ، سیاسی استحکام ملک میں موجودہونا چاہئے ، اگروزیر اعظم نے ایسی کوئی بات کی ہے تو اچھی بات ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جہاں تک آرمی ترمیم ایکٹ کاتعلق ہے تو کیا یہ تسلیم کیا جاتا ہے کہ فوج کی کمانڈ ایک متنازعہ آرمی چیف کے پاس ہو؟ حکومت نے تو فیصلہ کرلیا ہے کہ اس نے آرمی چیف کوتوسیع دینی ہے تو کیا ہم پھر اس ایشو متنازعہ بناتے ؟

ملک احمد خان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم ایک سیاسی شخصیت ہے ، وزیراعظم کے خلاف اورالیکشن پر میرے تحفظات ہیں تومیں ضرورسوال اٹھاﺅں گا ، زبر دست طریقے سے تنقید کروںگا ، سیاست کسی جامد چیز کا نام نہیں ہے ، اگر مجھے کسی ایشو پر حکومت سے اختلاف ہے تو ضروری نہیں ہے کہ مجھے حکومت کے ساتھ ہر ایشو پر اختلاف ہو۔انہوں نے کہا کہ مفتاح اسماعیل کے خلاف کیس ہی کچھ نہیں ہے ،احسن اقبال کیخلاف کیس میں نیب خود کہہ رہاہے کہ اس کیس میں کرپشن نہیں ہے ، نواز شریف طبی ضمانت لے کر باہر گئے ہیں۔

مزید : قومی