دھرنا کمیٹی اور حکومت میں مذاکرات کامیاب ہوگئے 

دھرنا کمیٹی اور حکومت میں مذاکرات کامیاب ہوگئے 
دھرنا کمیٹی اور حکومت میں مذاکرات کامیاب ہوگئے 
سورس: فائل فوٹو

  

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)کوئٹہ میں ہزارہ برادری اور حکومت کے مابین مذاکرات کامیاب ہوگئے ہیں، لواحقین نے میتوں کی تدفین کی اجازت دے دی ہےجبکہ وزیر اعظم عمران خان کی کوئٹہ روانگی کے لئے نور خان ائیر بیس پر طیارہ سٹینڈ بائی کردیا گیا ہے،دھرنا ختم ہونے کا اعلان ہوتے ہی وزیر اعظم عمران خان کوئٹہ روانہ ہوجائیں گے۔

نجی ٹی وی 24 نیوز نے دعوی کیا ہے کہ ہزارہ برادری اور حکومت کے درمیان مذاکرات کامیاب ہوگئے جس کے بعد لواحقین نے میتوں کی تدفین کی اجازت دے دی ہے۔ حکومت کی جانب سے وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان،ڈپٹی سپیکرقومی اسمبلی قاسم سوری ،معاون خصوصی سید  زلفی بخاری اور وفاقی وزیر علی زیدی نے مظاہرین سے مذاکرات کیے۔ وزیراعظم نے مذاکراتی ٹیم کو لواحقین اورمظاہرین کو میتوں کی فوری تدفین پر قائل کرنے کی ہدایت کی تھی۔

خیال رہے کہ ہزارہ برادری کے 11 کان کنوں کے قتل کے بعد ان کے لواحقین نے گزشتہ چھ روز سے میتوں کو سڑک پر رکھ کر دھرنا دے رکھا ہے، مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ جب تک وزیراعظم نہیں آئیں گے ہم احتجاج ختم نہیں کریں گے تاہم وزیراعظم کے جمعہ کے روز دیئے جانے والے اُس بیان نے صورتحال کشیدہ کر دی تھی جس میں وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ حکومت مقتول کان کنوں کے لواحقین کے سارے مطالبات مان چکی ہے،اب یہ مطالبہ کرنا کہ وزیراعظم کے آنے تک تدفین نہیں کریں گے ،اِس طرح کسی ملک کے وزیراعظم کو بلیک نہیں کیا جاسکتا، لاشیں آج دفنا دیں تو میں آج ہی کوئٹہ آجاؤں گا۔وزیراعظم کے بیان پر دھرنا منتظمین اور حکومت مخالف سیاسی جماعتوں نے سخت ردعمل دیتے ہوئےکڑی تنقید کی تھی ۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -