پشاور میں ڈرائینگ ماسٹر کی آسامی پربھرتی نہ کرنے کیلئے دائر رٹ منظور

 پشاور میں ڈرائینگ ماسٹر کی آسامی پربھرتی نہ کرنے کیلئے دائر رٹ منظور

  

پشاور(نیوز رپورٹر)پشاور ہائیکورٹ نے قومی شناختی کارڈ کی بنیاد پردرخواست گزارہ کو پشاور میں ڈرائینگ ماسٹر کی آسامی پربھرتی نہ کرنے کیلئے دائر رٹ منظور کرتے ہوئے اسے متعلقہ پوسٹ پر بھرتی کرنیکا فیصلہ جاری کردیا۔ فاضل عدالت نے یہ فیصلہ محمد ارشاد مہمند ایڈوکیٹ کی وساطت سے سلمیٰ لیاقت کی رٹ پر جاری کئے ہیں جس میں موقف اپنایاگیا تھا کہ درخواست گزارہ نے محکمہ تعلیم خیبرپختونخوا میں ڈرائینگ ماسٹر کی آسامی کیلئے ٹیسٹ اورانٹرویودیا اور ٹاپ 5امیدواروں میں اسکا نام بھی شامل تھا تاہم اسے اس بنیاد پر نہیں لیا گیا کہ اسکے این آئی سی میں ضلع نوشہرہ لکھا ہے۔ دوران سماعت درخواست گزارہ کے وکیل نے دلائل دیئے کہ اسکی موکل پشاورکی رہائشی ہے اور انہوں نے تعلیم بھی یہاں سے حاصل کی جبکہ ڈومیسائل بھی پشاورکا ہے۔این آئی سی میں موجودہ پتہ پشاورکاہے جبکہ مستقل پتہ نوشہرہ ہونیکی بنیادپراسے نظرانداز کرنا اسکے ساتھ ناانصافی ہے۔دوسری طرف ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل نے دلائل دیئے کہ اشتہار میں شرط رکھی گئی تھی کہ وہ امیدوار اہل ہوگا جسکے این آئی سی میں پتہ متعلقہ ضلع کا ہو۔ عدالت نے دوطرفہ دلائل مکمل ہونے پر محکمہ تعلیم کا اقدام غیرقانونی قراردیتے ہوئے درخواست گزارہ کو متعلقہ آسامی پر بھرتی کرنے کیلئے زیرغور لانے کے احکامات جاری کردیئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -