شہداء کی تدفین میں لواحقین نہیں وزیراعظم خود رکاوٹ ہیں: سراج الحق 

    شہداء کی تدفین میں لواحقین نہیں وزیراعظم خود رکاوٹ ہیں: سراج الحق 

  

 کوئٹہ(آئی این پی)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ بلوچستان کے علاقے مچھ میں قتل کیے جانے والے افراد کی تدفین میں رکاوٹ شہدا کے لواحقین نہیں بلکہ وزیراعظم ہیں کوئٹہ میں دھرنے کے شرکا ء سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق نے کہا کہ ہم آپ مل کر یہی رو رہے ہیں کہ پاکستان ایک اسلامی ملک ہے اور ایک اسلامی اور جمہوری ملک میں یہ درندگی، یہ بربریت اور یہ وحشت کیوں ہو رہی ہے انہوں نے کہا کہ ہمارے بھائیوں کوگولیاں مار کر ذبح کیا گیا لیکن اس سے بڑھ کر ظلم یہ ہے کہ یہاں کچھ لاشیں موجود ہیں جن میں روح نہیں ہے اور کچھ زندہ نعشیں اسلام آباد میں ہیں جو مظلوم کی آواز، ان کی آہ و بکا اور فریاد نہیں سن رہے ہیں جو اپنے آپ کو حکمران کہتے ہیں ان کا کہنا تھا کہ یہ 10 لوگوں کو ذبح نہیں کیا گیا بلکہ 22 کروڑ عوام کو ذبح کیا گیا غریب اور بے کس و لاچار مزدوروں پر حملے کو ہم 22 کروڑ عوام پر حملہ تصور کرتے ہیں  آج صوبائی دارالحکومت میں یہ دس لاشیں موجود ہیں تو ان کا قاتل ہم اس وقت تک اس حکومت کو ہی تصور کرتے ہیں جب تک کہ ان کے قاتل کو گرفتار کر کے سزا نہ دی جائے انہوں نے کہا کہ میں عمران خان سے کہتا ہوں کہ آپ کے غرور و تکبر کی وجہ سے پاکستان کی بدنامی ہو رہی ہے سانحے کے بعد کابینہ کا اجلاس اسلام آباد کے بجائے کوئٹہ میں کرنا چاہیے تھا ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت نے جو رویہ اختیار کیا وہ دہشت گردوں کو حوصلہ اور شہ دیتا ہے امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں 6 ہزار سے افراد لاپتا ہیں جس میں سے دو ہزار اسی حکومت کے دور میں لاپتا ہوئے ہیں اس کا کون ذمہ دار ہے؟ تبدیلی کے نام پر آنے والوں! کل آپ یہی کہتے تھے کہ ہمیں حکومت ملی تو ہم لاپتا لوگوں کو برآمد کریں گے، ان میں سے 222 لوگ برآمد کیے گئے لیکن زندہ نہیں بلکہ ان کی لاشیں برآمد ہوئیں کون ذمے دار ہے؟ یہ لاشیں قیامت میں وزیراعظم تمہارے گریبان میں ہاتھ ڈالیں گی ان کا کہنا تھا کہ یہ لاشیں قیامت میں وزیراعظم کے خلاف گواہ بنیں گی، یہ لاشیں قیامت تمہارے اپنا کیس اللہ اور نبی مہربان ؐ کی عدالت میں پیش کریں گی تو تم کیا جواب دو گے۔انہوں نے وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کو فورا یہاں پہنچنا چاہیے تھا، آپ ضرور آئیں لیکن آپ اس وقت آئیں گے جب ان لوگوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ یہ بیان وزیراعظم کی منفی سوچ کی عکاسی کرتا ہے، یہ بلیک میل نہیں کررہے بلکہ معصومانہ مطالبہ کررہے ہیں کہ اگر آپ واقعی وزیراعظم ہیں تو آپ آ جائیں۔ 

سراج الحق 

مزید :

صفحہ اول -