کھوتے کی یہ تصویر تو آپ نے کئی دفعہ دیکھی ہوگی لیکن کیا آپ کو اس کی حقیقت معلوم ہے؟ فوجی نے کھوتا کندھے پر کیوں اٹھا رکھا ہے؟ آپ بھی جانئے

کھوتے کی یہ تصویر تو آپ نے کئی دفعہ دیکھی ہوگی لیکن کیا آپ کو اس کی حقیقت ...
کھوتے کی یہ تصویر تو آپ نے کئی دفعہ دیکھی ہوگی لیکن کیا آپ کو اس کی حقیقت معلوم ہے؟ فوجی نے کھوتا کندھے پر کیوں اٹھا رکھا ہے؟ آپ بھی جانئے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سوشل میڈیا پر آپ کئی دفعہ ایسی چیزیں، ویڈیو ز یا تصاویر دیکھتے ہیں جن کے ماخذ کے بارے میں آپ کو معلوم نہیں ہوتا، ایسی ہی زیر نظر تصویر ہے جومختلف اوقات میں آپ کی نظروں سے گزری ہوگی لیکن شاید اس کی حقیقت معلوم نہ ہو، اب اس کی حقیقت سامنے آگئی ہے ۔

زیر نظر تصویر میں ایک فوجی نے گدھے کو اپنے کندھوں پر اٹھا رکھا ہے اور سینئر صحافی ارشد شریف نے بتایا کہ "1958 میں الجزائر کی جنگ کے دوران یہ تصویر لی گئی جس میں ایک فوجی نے گدھا اٹھا رکھا ہے کیونکہ ممکنہ طورپر اس جگہ پر بارودی سرنگیں بچھی تھیں، اگر گدھے کو آزاد چلنے دیا جاتا تو ممکنہ طورپر وہ بارودی سرنگ سے ٹکرا سکتا تھا ، کیا سبق ملا ؟"۔

یادرہے کہ الجزائز کی جنگ یا الجزائر کی آزادی کی جنگ سنہ 1954 سے سنہ 1962 ء تک چلتی رہی، یہ لڑائی فرانس اور الجیرین نیشنل لبریشن فرنٹ کے درمیان ہوئی جس کے نتیجے میں الجزائر کو فرانس سے آزادی ملی ۔ تصویر شیئر ہونے اور وضاحت پر صحافی اور اینکر پرسن اجمل جامی نے لکھا کہ "یہ تصویر مختلف وجوہات کی بناء پر سوشل میڈیا پر اکثر استعمال کی جاتی ہے، اس تصویر کا پس منظر شیئرکرنے پر ارشد شریف صاحب شکریہ، الجزائز کی جنگ، پلیز نوٹ"۔

اس پر ایک صارف نے لکھا کہ " گدھے کی جان بچانے کے لیے اسکو مجبورا اٹھانا پڑتا ہے"۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -