مچھ واقعہ بڑی گیم کا حصہ، دہشتگردی میں 35 سے 40 لوگ ملوث، فرقہ واریت پھیلانے والوں کا پیچھا کریں گے، وزیر اعظم

مچھ واقعہ بڑی گیم کا حصہ، دہشتگردی میں 35 سے 40 لوگ ملوث، فرقہ واریت پھیلانے ...
مچھ واقعہ بڑی گیم کا حصہ، دہشتگردی میں 35 سے 40 لوگ ملوث، فرقہ واریت پھیلانے والوں کا پیچھا کریں گے، وزیر اعظم

  

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہماری انٹیلی جنس ایجنسیوں نے آگاہ کیا تھا کہ بھارت فرقہ وارانہ فسادات پھیلانا چاہتا ہے،یہ واقعہ بڑی گیم کا حصہ ہے،دہشت گردی کرنے والے لوگوں کی تعداد 35 سے 40 ہے,ہم فرقہ وارانہ فساد پھیلانے والوں کے پیچھے جائیں گے۔

کوئٹہ میں سانحہ مچھ کے لواحقین سے بات چیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم ہزار ہ برادری کو اکیلا نہیں چھوڑیں گے،ہم نے شہدا کے لواحقین سے جو وعدے کئیے ہیں وہ پورے کریں گے۔جب لوگ امام بارگاہ میں آنے سے ڈرتے تھے میں تب بھی ہزار ہ برادری کے پاس آیاتھا۔ہزار ہ برادری کے ساتھ ہونے والے دہشت گردی کے واقعات سے آگاہ ہوں،کراچی میں ایک سنی عالم کو قتل کیا گیا،جب ایک فرقہ پرست تنظیم کا نام لیکر تنقید کی تو مجھے قتل کی دھمکیاں دی گئیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم سیکیورٹی فورسز کا ایک سیل بنارہے ہیں جو آپ کو مکمل پروٹیکشن دے گا،ہم شہدا  کے لواحقین اور پوری ہزارہ کمیونٹی کو اعتماد دلانا چاہتے ہیں،ایک عام شخص اور وزیراعظم کے معاملات میں فرق ہوتا ہے،میں نے اسی وجہ سے کہا تھا کہ آپ شہدا کی تدفین کریں میں آپ کے پاس آجاو گا۔میں ایک ایک چیز دیکھ رہا تھا اور وفاقی وزرا سے مسلسل رابطے میں تھا،شکریہ کہ آپ نے ہماری بات مانی۔ساری قوم ہزارہ  برادری کے ساتھ کھڑی ہے،میری حکومت اور صوبائی حکومت آپ کے ساتھ کھڑی ہے،دنیا میں شیعہ سنی فساد کروانے کی کوشش کی جارہی ہے،ہم نے ایران اور سعودی عرب کے معاملات کو بھی ٹھیک کروانے کی کوشش کی.

مزید :

قومی -Breaking News -اہم خبریں -