جنازے کے موقع پر آدمی کی نوجوان لڑکی کی لاش سے زیادتی کی کوشش 

جنازے کے موقع پر آدمی کی نوجوان لڑکی کی لاش سے زیادتی کی کوشش 
جنازے کے موقع پر آدمی کی نوجوان لڑکی کی لاش سے زیادتی کی کوشش 

  

ہرارے(مانیٹرنگ ڈیسک) زمباوے میں ایک لڑکی کی موت واقع ہو گئی اور رات کو اس کی میت گھر میں رکھی تھی کہ دو شیطان صفت انسانوں نے گھر میں گھس کر اس کے ساتھ ایسی قبیح حرکت کر ڈالی کہ انسانیت شرم سے پانی پانی ہو گئی۔ ڈیلی سٹار کے مطابق یہ المناک واقعہ زمباوے کے قصبے ایپورتھ میں پیش آیا ے جہاں ملیزا مازہندو نامی لڑکی کی موت واقع ہو گئی۔ اس کی میت رات کو گھر میں رکھی تھی اور سوگوار خاندان صبح کے انتظار میں تھا کہ اس کی آخری رسومات ادا کی جائیں۔ تاہم رات کے 1بجے کے قریب 49سالہ سپلیانو اپنے ایک ساتھی کے ہمراہ گھر میں گھس آیا۔

سپلیانو نے کمرے میں گھس کر ملیزا کی میت کے ساتھ جنسی زیادتی شروع کر دی جبکہ اس کا ساتھی کمرے کے دروازے میں کھڑا ہو گیا تاکہ فیملی کا کوئی فرد کمرے میں داخل نہ ہو سکے۔ رپورٹ کے مطابق گھر والوں نے ہمسایوں کو بلایا اور ان کی مدد سے ان شیطانوں کو گھر سے باہر نکالا گیا۔مردہ لڑکی پر جنسی حملہ کرنے والے اس درندے نے لڑکی کی ماں کو بتایا کہ وہ کافی عرصے سے اس کی بیٹی کے ساتھ جنسی تعلق قائم کرنا چاہتا تھا لیکن نہیں کر سکا۔ چنانچہ اس نے اب ایسا کیا۔ رپورٹ کے مطابق دونوں ملزمان شراب کے نشے میں دھت تھے۔ پولیس نے دونوں کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کر دیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -