امریکی سائنس دانوں نے ماضی کے اڑنے والے سب سے بڑے پرندے کی باقیات دریافت کرلیں

امریکی سائنس دانوں نے ماضی کے اڑنے والے سب سے بڑے پرندے کی باقیات دریافت ...

فلوریڈا(اے پی پی) امریکی سائنس دانوں نے اڑنے والی ماضی کے سب سے بڑے پرندے کی باقیات کے آثار کا پتہ چلایا ہے۔ امریکی ذرائع ابلاغ کی رپورٹس کے مطابق نارتھ کیرولینا میں ارتقائی سینتھیس سینٹر کے ماہر ڈان کیپکا نے بتایا کہ اس پرندے کو پیلا گورنس سندریسی کا نام دیا گیا ہے اور اس پرندے کی ہڈیوں کا سائز ماضی کے ریکارڈ یافتہ پرندوں کی ہڈیوں کے سائز سے بھی بڑا ہے۔ سائنس دانوں نے اس یقین کا اظہار بھی کیا ہے کہ اس پرندے کے پھیلے ہوئے پیروں کی چوڑائی 20 سے لے کر 24 فٹ تک ہوتی ہے۔

 اور یہ آجکل کے اڑنے والے سب سے بڑے پرندے البٹراس سے بھی سائز میں دوگنا بڑا ہے۔دنیا کے جس سب سے بڑے پرندے کی باقیات سائنس دانوں نے دریافت کی ہیں یہ پرندہ کافی عرصہ قبل ناپید ہوگیا تھا۔ اس پرندے کی ملنے والی باقیات میں کئی پر ٹانگوں کی ہڈیاں اور مکمل کھوپڑی شامل ہے۔           

مزید : عالمی منظر