سانحہ ماڈل ٹاﺅن،ایس ایچ او کو ریکارڈ دوبارہ عدالت پیش کرنے کیلئے نوٹس جاری

سانحہ ماڈل ٹاﺅن،ایس ایچ او کو ریکارڈ دوبارہ عدالت پیش کرنے کیلئے نوٹس جاری

لاہور(نامہ نگار )ایڈیشنل سیشن جج صفدر علی بھٹی نے سانحہ ماڈل ٹاون کا مقدمہ منہاج القرآن انتظامیہ کی درخواست پر وزیراعظم پاکستان، وزیر اعلی پنجاب سمیت 21سیاسی شخصیات اور پولیس افسران کے خلاف درج کروانے سے متعلق درخواست کی سماعت 15جولائی تک ملتوی کرتے ہوئے ایس ایچ او کو ریکارڈ دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کے لئے نوٹس جاری کردیا ہے۔فاضل عدالت میں گزشتہ روز مذکورہ درخواست کی سماعت ہوئی ۔عدالت کے روبرو منہاج القرآن انتظامہ کے وکیل منصورالرحمن آفریدی نے موقف اختیار کیاکہ ماڈل ٹاون میں عوامی تحریک کے نہتے کارکنوں پر پولیس نے اندھا دھند فائرنگ کی جس سے چودہ افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ 100 سے زائد افراد زخمی ہوئے لیکن پولیس نے مقتولین کے ورثاءکی درخواست پر مقدمہ درج کرنے کے بجائے اپنی ہی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا عدالت سے استدعا ہے کہ پولیس نے یہ اقدام وزیراعظم اور وزیراعلی پنجاب سمیت 21سیاسی شخصیات اور پولیس افسران کے ایماءپر کیا گیالہذا ان تمام افرادکے خلاف مقدمہ درج کرنے کاحکم دیاجائے دوران سماعت ایس ایچ او فیصل ٹاون ریکارڈ سمیت پیش نہ ہوسکا ۔پبلک پراسکیوٹر نے بتایاکہ ریکارڈ جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم کے پاس ہے لہذا مہلت دی جائے فاضل جج نے آئندہ سماعت پر دوبارہ ریکاڑد پیش کرنے کاحکم دیتے ہوئے سماعت ملتوی کردی ہے۔

سانحہ ماڈل ٹاﺅن

مزید : صفحہ آخر