نیویارک، 110بن مانسوں کو ریٹائرمنٹ مل گئی

نیویارک، 110بن مانسوں کو ریٹائرمنٹ مل گئی

نیویارک (نیوز ڈیسک) امریکہ میں ریٹائرمنٹ کے نام پر 110بن مانسوں کو متنازع سرکاری ریسرچ سنٹر سے بالآخر آزادی مل گئی۔ تمام بن مانس ڈیڑھ سال تک لافایت میں قائم ریسرچ لیبارٹری میں رہنے کے بعد بخیریت لوزیانا میں بن مانسوں کی جنت یعنی نیشنل چمپنزی سینکچری پہنچ چکے ہیں۔ اس ضمن میں چمپ جنت کے صدر اور سی ای او کیتھی ویلزسپریٹز کا کہنا ہے کہ ”ہم بہت زیادہ پ±رجوش ہیں کہ آج وہ عظیم دن آن پہنچا ہے۔ متعدد آرگنائزیشنز اور افراد نے ان بن مانسوں کو سینکچری کے نئے ماحول میں دوبارہ سے نارمل زندگی شروع کرنے کے قابل بنانے کے لئے انتھک محنت کی ہے“۔ یاد رہے کہ ایک سے 50 سال کی عمر کے بن مانسوں کو جنوبی لوزیانا کی لیبارٹری سے سینکچری لانے کے لئے مہم کا آغاز نومبر 2012ئ میں اس وقت ہوا جب نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ نے یہ طے کیا کہ ان بن مانسوں کو اب ریٹائر ہو جانا چاہیے۔ اس مہم پر 5ملین ڈالر خرچ کئے گئے ہیں۔ کیتھی ویلزسپریٹز کا مزید کہنا ہے کہ بن مانسوں کا یہ نیشنل چمپنزی سینکچری لوزیانا 2سو ایکڑ پر مشتمل ہے، جو بن مانسوں کی دیکھ بھال سمیت دیگر تمام ضروریات کو پورا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ گزشتہ سال سینکچری میں بن مانسوں کے کھیلنے کے لئے 6 گرا?نڈ بنائے گئے تھے اور اب حال ہی میں متعدد بیڈرومز اور ایک بہت بڑا کھیل کا گرا?نڈ بھی بنایا گیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر