مشرف غداری کیس ، وزارت قانون کے اہلکارنے بطور گواہ بیان قلمبند کرا دیا

مشرف غداری کیس ، وزارت قانون کے اہلکارنے بطور گواہ بیان قلمبند کرا دیا

  



اسلام آباد(خصو صی رپورٹ )مشرف غداری کیس میں وزارت قانون کے اہلکار کا بیان قلمبند کرلیا گیا،چیف جسٹس ، اعلیٰ عدلیہ کو کام سے روکنے اور ججز کے حلف نامے سمیت 19دستاویزات بھی عدالت میں پیش کردی گئیں۔جسٹس فیصل عرب کی سربراہی میں خصوصی عدالت کا 3 رکنی بنچ کیس کی سماعت کررہا ہے۔جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کی سماعت کے دوران استغاثہ کی طرف سے وزارت قانون کے اہل کار تاج عمر نے بطور گواہ بیان قلمبند کرا دیا۔عدالت میں سابق چیف جسٹس افتخار محمد چودھری اور اعلیٰ عدلیہ کو کام سے روکنے کی دستاویزات، 3 نومبر کو ججز کے حلف نامے ،14 دسمبر 2007 کو ایمرجنسی اٹھانے کے حکم نامے سمیت دیگر 19 اہم دستاویزات بھی پیش کر دی گئیں، جبکہ پرویز مشرف کی تقریر کی اصل ٹیپ بھی عدالت میں بطور شہادت پیش کی گئی۔ وفاق کی طرف سے وکیل اکرم شیخ نے کہا کہ استغاثہ کی طرف سے اب صرف 3 تفتیشی افسران کی شہادت باقی ہے، شہادت مکمل ہونے کے بعد مشرف کو بیان ریکارڈ کرانے عدالت پیش ہوناہوگا،مشرف کا 342 کابیان ریکارڈکرانے کےلئے عدالت میں حاضرہوناضروری ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...