بجلی کی ڈیمانڈ 19ہزار میگاواٹ سے تجاوز کر گئی ، لوڈ شیڈ نگ کے دورانیہ میں اضافہ

بجلی کی ڈیمانڈ 19ہزار میگاواٹ سے تجاوز کر گئی ، لوڈ شیڈ نگ کے دورانیہ میں ...

                             لاہور(کامرس رپورٹر)ملک میں بجلی کی ڈیمانڈ میں اضافہ کے باعث شارٹ فال مزید بڑھ گیا جس سے روزہ داروں کیلئے لوڈ شیڈنگ کا عذاب بھی مزید بڑھ گیا ۔ ملک کے اکثر علاقوں میں گرمی کی شدت میں اضافہ کے باعث بجلی کی ڈیمانڈ 19 ہزار میگا واٹ سے بھی تجاوز کر گئی جس کے باعث شارٹ فال میں اضافہ ہوا ۔ گزشتہ روز بھی سحر و افطار کے موقع پر بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے دیگر اوقات میں بدترین لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ دن کے اوقات میں بدترین لوڈ شیڈنگ کے باعث روزہ دار بلبلا اٹھے ۔ دیگر اوقات میں ایک گھٹنے بعد اڑھائی اڑھائی گھٹنے تک کی لوڈ شیڈنگ کی گئی ۔ تمام سب ڈویژنوں میں مرمت کے نام پر ایک ایک فیڈر اٹھ گھنٹے تک کے لئے بند رکھا گیا ۔ رات کے وقت لوڈ بڑھنے پر لیسکو سمیت دیگر ڈسکوز کے درجنوں فیڈرز ٹرپ کر گئے جس سے ان فیڈر والے علاقوں میں تین سے چار گھنٹے تک بجلی کی بندش رہی ۔دوسری جانب سگنل فری تعمیراتی کام کی وجہ لیسکو کے 132 کے وی کے 8 گرڈ صبح کے اوقات میں مسلسل کئی گھنٹے تک بند رہے جس سے ڈیڑھ سو سے زائد فیڈروں سے بجلی کی سپلائی معطل رہی، لیسکو کی جانب سے 7 سے 11 بجے تک بجلی کی بندش کا اعلان کیا گیا تھا تاہم متعدد علاقوں میں بجلی کئی گھنٹے تاخیر سے آئی جبکہ بجلی بحال ہونے کے بعد بھی وقفے وفقے سے ٹرپنگ کا سلسلہ جاری رہا، ہربنس پورہ کے علاقہ میں واسا کا ٹیوب ویل خراب ہونے سے پانی کی بھی شدید قلت رہی۔انرجی مینجمنٹ سیل کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 19310 میگا واٹ جبکہ پیداوار 13240 میگا واٹ رہی طلب و رسد میں 6070 میگا واٹ کا فرق رہا ۔

 لوڈشیڈنگ

مزید : صفحہ آخر