خانقاہ ڈوگراں: غنڈہ گرد لوگوں کا مین بازار کے تاجروں پر تشدد

خانقاہ ڈوگراں: غنڈہ گرد لوگوں کا مین بازار کے تاجروں پر تشدد

خانقاہ ڈوگراں (نمائندہ خصوصی) مین بازار میں غنڈہ راج۔ درجن بھر افراد کا سوٹوں۔لاٹھیوں اور اسلحہ سے لیس ہو کر بھرے بازار میں تاجروں پرشدید تشدد۔ پولیس نذرانہ لیکر خاموش تماشائی بن گئی۔ تاجروں میں شدید خوف وہراس۔ حکام بالہ سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق خانقاہ ڈوگراں مین بازار کے کپڑے کے معروف تاجر گلزار بٹ کی دوکان کے سامنے کچھ غنڈہ گرد لوگوں نے موٹر سائیکل کھڑی کر کے راستہ بند کردیا۔ تاجر نے راستہ کھولنے کا کہا تو انھوں نے گالیاں دینا شروع کر دیں اور فون کر کے اپنے دیگر ساتھیوں بدمعاش گروپ(نواب گروپ) کو بلا لیا۔انکے سرغنہ ڈی ایس پی صفدرآباد کے ڈرائیور اویس نے للکار کر کہا کہ تمھیں ہمارے نواب گروپ کے صدر رانا عابد کے ساتھ الجھنے کا مزہ چکھائیں گے اور انھوں نے تاجر کو مارنا شروع کر دیا ۔ تاجر جان بچانے کے لئے اپنے قریب گھر میں گھسا تو سارے غنڈے بھی گھر میں گھس گئے۔ بازار میں ڈیوٹی پر مامور گارڈ نے فائرنگ کر کے اسکی جان خلاصی کروائی تو درجن بھر غنڈے لاٹھیاں لہراتے اور ہوائی فائرنگ کرتے ہوئے فرار ہو گئے۔ اس واقع پر تمام تاجر اکٹھے ہو گئے اور اس غنڈہ گردی کے خلاف شدید احتجاج کیا۔ ان کا کہناتھا کہ اگر انکی بد معاشی بند نہ کئی گئی تو تاجر دوکانوں کی چابیاں ایس ایچ او کے حوالے کر دیں گے ۔ متاثرہ تاجر نے تیں دن سے درخواست دے رکھی ہے مگر مقامی پولیس نذرانہ لیکر خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے اور کسی بھی کاروائی سے گریزاں ہے۔ ذرائع کے مطابق (نواب گروپ) روڑ ڈکیتیوں اور اسٹریٹ کرائم کی مختلف وارداتوں میں بھی ملوث ہے جو پولیس کو منتھلی دیکر اپنی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔

مزید : علاقائی