بنوں:آئی ڈی پیز کی آمد سے سرکاری ہسپتالوں میں رش بڑھ گیا

بنوں:آئی ڈی پیز کی آمد سے سرکاری ہسپتالوں میں رش بڑھ گیا
 بنوں:آئی ڈی پیز کی آمد سے سرکاری ہسپتالوں میں رش بڑھ گیا

  

 بنوں(مانیٹرنگ ڈیسک )شمالی وزیرستان کے متاثرین کی آمد سے بنوں کے سرکاری ہسپتالوں میں رش بڑھ گیا ہے ، فلاحی اداروں کے میڈیکل کیمپس میں بھی روزانہ سیکڑوں مریض لائے جا رہے ہیں، پمز ہسپتال اسلام آباد سے ڈاکٹروں کی ٹیم بھی بنوں پہنچ گئی ہے۔تفصیلات کے مطابق شمالی وزیرستان سے نقل مکانی کرکے بنوں آنے والے متاثرین میں مریضوں کی تعداد زیادہ جبکہ طبی سرکاری کیمپ کم ہیں، طبی عملے کی اسی کمی کے پیش نظر پمزہسپتال اسلام آباد سے چار لیڈی ڈاکٹرز اور 20 ڈاکٹروں سمیت 62 افراد کا سٹاف اور دو بسوں میں بنائے گئے موبائل ہسپتال بھی بنوں پہنچ گئے ہیں۔ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ موسم گرم ہے ایسے میں متاثرین اپنے بچوں کا مسلسل میڈیکل چیک اپ کروائیں۔دوسری جانب جن آئی ڈی پیز کی رجسٹریشن کا عمل اب تک مکمل نہیں ہوسکا ہے اورانہیں ماہ رمضان اور گرم موسم کے باعث شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ ادھر رکن قومی اسمبلی اور پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی انفارمیشن سیکرٹری عائشہ گلالئی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ شمالی وزیرستان سے مقل مکانی کرنے والے 8 لاکھ 21 ہزار 424 افراد کی رجسٹریشن ہوچکی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ متاثرین کے لئے کمپلینٹ سیل قائم کردیے گئے ہیںجہاں آئی ڈی پیز اپنی شکایات درج کرارہے ہیں۔

مزید : دفاع وطن