کریانہ فروش مافیارمضان بازاروں سے سستی چینی خرید کر مہنگی فروخت کرتا ہے ،ریاض قدیر بٹ

کریانہ فروش مافیارمضان بازاروں سے سستی چینی خرید کر مہنگی فروخت کرتا ہے ...

  



 لاہور(کامرس رپورٹر)پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن نے سستے رمضان بازاروں میں غریب صارفین کیلئے فراہم کی گئی 15 ہزار ٹن چینی کے غلط استعمال پر افسوس کا اظہار کیا ہے، ایسوسی ایشن کے چیئرمین پنجاب ریاض قدیر بٹ نے کہا ہے کہ کریانہ فروش مافیا عام صارفین کی حق تلفی کر کے سستے رمضان بازاروں سے چینی خرید کر اوپن مارکیٹ میں فروخت کر رہا ہے انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر شوگر ملوں نے رمضان المبارک میں غریب صارفین کیلئے 15 ہزار ٹن چینی پیداواری لاگت سے بھی کم قیمت پر حکومت کو فراہم کی تھی تاکہ رمضان بازاروں میں غریب صارفین خرید سکیں تاہم میڈیا رپورٹس کے مطابق رمضان بازاروں میں کمرشل خریدار اُمڈ آئے ہیں جو بازار سے 10روپے فی کلو سستی چینی خرید کر دوکانوں پر مہنگے داموں فروخت کر رہے ہیں ان بد عنوان عناصر میں کریانہ فروش بھی شامل ہیں جو اپنے ملازموں اور بچوں کو لائن میں لگاکر سستی چینی خرید کر اپنی دوکانوں پر مہنگے داموں فروخت کرتے ہیں۔ چیئرمین پی ایس ایم اے نے کہا کہ دکاندار مبینہ طور پر اپنا اثر و رسوخ استعمال کر کے اکٹھی چینی حاصل کرکے 50کلو کی بوری پر 500 روپے کا ناجائز منافع کما رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عام شہری اپنی ضرورت کے مطابق چینی کی خریداری کر چکے ہیں اور اب صرف مٹھائی، بیکری ، کریانہ فروش اور شربت بنانے والے ناجائز منافع خوری کے لیے رمضان بازاروں سے چینی خرید رہے ہیں۔ریاض قدیر بٹ نے اربابِ اختیار کی توجہ اس ناجائز کاروبار کی طرف مبذول کرائی ہے تاکہ غریب صارفین کی حق تلفی نہ ہو اور شوگر ملوں نے جو نقصان برداشت کر کے چینی وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر حکومت کو دی ہے اس سے صرف مستحق صارفین ہی مستفید ہوں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...