شمالی کوریاکا جموبی کوریا کے ساتھ فوجی کشیدگی میں کمی کا مطالبہ

شمالی کوریاکا جموبی کوریا کے ساتھ فوجی کشیدگی میں کمی کا مطالبہ

  



سیول (آن لائن)شمالی کوریا نے پیر کے روز جنوبی کوریا کے ساتھ فوجی کشیدگی میں کمی کا ایک اور مطالبہ کیا ہے اس کے باوجود کے اس کے رہنما کم جونگ ان نے حساس میری ٹائم سرحد کے نزدیک ایک جزیرہ پرفائرنگ کی مشقوں کا مشاہدہ کیا ہے ۔سرکاری کے سی این اے نیوز ایجنسی نے ایک سرکاری بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ وقت ہے کہ شدید جارحیت اور محاذ آرائی کو ختم کیا جائے اور سیﺅل پر زور دیا کہ وہ امریکہ کے ساتھ سالانہ مشترکہ فوجی مشقیں ختم کردے ۔گذشتہ ہفتے شمالی کوریا کے اعلیٰ فوجی ادارے نے دونوں فریقین پر ہر قسم کی جارحانہ فوجی سرگرمیاں ختم کرنے پر زور دیا تھا ، اس تجویز کو سیول کی جانب سے پیانگ یانگ کے جوہری ہتھیاروں کے پروگرام کے تناظر میں مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا گیا ، تازہ ترین پیش کش کو قبول کئے جانے کا بھی امکان ہے کیونکہ جنوبی کوریا بارہا یہ واضح کرچکا ہے کہ سالانہ مشترکہ مشقیں ناقابل بحث ہیں ۔شمالی کوریا وقتاً فوقتاً امن تجاویز پیش کرتا رہتا ہے جنہیں اکثر عالمی برادری کو دھوکہ دینے کی چالو کے طور پر دیکھا جاتا ہے ۔تازہ ترین بیان ایسے وقت سامنے آیا جب کم سرحدی جزائر کادورہ جاری رکھے ہوئے ہیں جس کے دوران انہوں نے بحیرہ جاپان (مشرقی بحیرہ ) کے ایک جزیرہ کا دورہ کیا جہاں کے سی این اے کے مطابق انہوں نے فوجی مشقوں کا مشاہدہ کیا ۔ہفتہ کے روز کم نے بظاہر بڑے پیمانے پر بری ، بحری اور فضائی مشق کا معائنہ جس میں شمالی کوریا کے جزیرے پرفرضی حملے کی مشق کی گئی۔

مزید : عالمی منظر


loading...