کہیں آپ دانستہ طور پر زہر تو نہیں کھا رہے

کہیں آپ دانستہ طور پر زہر تو نہیں کھا رہے
کہیں آپ دانستہ طور پر زہر تو نہیں کھا رہے

  

لندن (نیوز ڈیسک) ایک نئی تحقیق کے مطابق مختلف غذاﺅں کی پیکنگ (ڈبے وغیرہ) میں خطرناک کیمیکل کا استعمال کیا جا رہا ہے، جو کینسر کو جنم دینے کے علاوہ نظام تولید پر بداثرات مرتب کرتے ہیں۔ یہ تحقیق کرنے والے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ غذاﺅں کی پیکجنگ میں 170سے زائد کیمیکل استعمال ہو رہے ہیں، اور افسوس کی بات ہے کہ یہ تمام قانونی حیثیت رکھتے ہیں۔ زہریلی اشیاءپر مشتمل یہ کیمیکل کینسر کا موجب بننے کے ساتھ جسمانی جینز اور نطفہ کو بھی متاثر کرتے ہیں۔ لیکن فوڈ سٹینڈرڈ ایجنسی کا کہنا ہے کہ غذاﺅں کا معیار یورپ کے معیار کے مطابق ہے اور پیکجنگ میں استعمال ہونے والے کیمیکل سے خطرے کی کوئی بات نہیں، اگر انہیں ایک مقررہ حد کے اندر رہتے ہوئے استعمال کیا جائے۔ یہ تحقیق کرنے والے ڈاکٹر جینی مونکے کا کہنا ہے کہ صارفین کے حوالے سے یہ نہایت غیر متوقع اور غیرضروری ہے ہے کہ غذاﺅں میں جان بوجھ کر کیمیکل استعمال کئے جاتے ہیں۔ غذاﺅں کی پیکجنگ میں وہ کیمیکل بھی شامل ہیں، جو ماحول اور انسانی جسم میں بھی پائے جاتے ہیں۔

مزید : تعلیم و صحت