کراچی میں گرفتار ’را‘ کے ایجنٹ محمد جنید کے تہلکہ خیز انکشافات

کراچی میں گرفتار ’را‘ کے ایجنٹ محمد جنید کے تہلکہ خیز انکشافات
کراچی میں گرفتار ’را‘ کے ایجنٹ محمد جنید کے تہلکہ خیز انکشافات

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی ( مانیٹرنگ ڈیسک ) ایس ایس پی راﺅ انوار کے گرفتار کردہ بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘کے ایجنٹ محمد جنید نے دوران تفتیش تہلکہ خیز انکشافات کیے ہیں ۔ ذرائع کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ملزم محمد جنید نے دوران تفتیش انکشاف کیا ہے کہ اس نے پہلی مرتبہ 1992 ءمیں ہونے والی آپریشن کے بعد وزٹ ویزے پر بھارت کا دورہ کیا اور 1993 ءمیں پاکستان واپس آ کر گارمنٹس کا کام شروع کیا ۔ ملزم جنید نے تفتیشی حکام کو بتایا ہے کہ 1996 ءمیں اسے سی آئی اے پولیس نے گرفتار بھی کیا تھا جس کے بعد اس نے ایک مرتبہ پھر1999 ءمیں وزٹ ویزے پر ہی بھارت کا دورہ کیا ۔ ملزم کا کہنا تھا کہ بھارت جا کر اس نے کالا محل پرانی دلی میں قیام کیا جبکہ 1999 ءمیں وطن واپسی پر ڈی ایس پی جاوید عباس نے اسے ایئرپورٹ پر کلیئر کروایا ۔ اس نے مزید بتایا کہ ڈی ایس پی جاوید عباس نے ہی اس کے لیے گھرجانے کی ٹیکسی کا انتظام کیا اور وہ بحفاظت گھر پہنچ گیا ۔ ملزم کا کہنا تھا کہ اس کے بھائی جاوید لنگڑا کی بھارت میں بھی جائیداد موجود ہے جبکہ تفتیشی افسران کا کہنا ہے کہ محمد جنید کراچی میں ٹارگٹ کلرز کی ٹیم کو ہینڈل کرتا ہے ۔ یاد رہے جاوید لنگڑا اور محمد جنید کو ایس ایس پی راﺅ انوار نے گرفتار کیا تھا اور انہوں نے ہی الزام لگایا تھا کہ یہ گرفتار دہشت گرد بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کے لیے کام کرتے ہیں ۔

مزید :

کراچی -