بے گناہ انسانیت کے قتل عام کو جہاد نہیں کہا جاسکتا،طاہر محمود اشرفی

بے گناہ انسانیت کے قتل عام کو جہاد نہیں کہا جاسکتا،طاہر محمود اشرفی

لاہور( نمائندہ خصوصی)فتح مکہ اسلام کے پیغام امن و سلامتی کا ایسا اظہار ہے کہ جس کی مثال کائنات عالم میں نہیں ملتی جہاد اسلام کا بنیادی فریضہ ہے لیکن بے گناہ انسانیت کے قتل عام کو جہاد نہیں کہا جاسکتاآج اسلام کے تصور جہاد کو مسخ کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں علماء، خطباء، مفکرین اور دانشوروں کو نوجوان نسل کی رہنمائی کیلئے اسلام کے حقیقی تصورجہاد کو اجاگر کرنا چاہئے یہ بات پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین اور وفاق المساجد پاکستان (رجسٹرڈ) کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے فتح مکہ کے موقع پر لاہور میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہی اس موقع پر مولاناایوب صفدر،مولانا محمد مشتاق لاہوری،مولانا ذکاء الرحمن اختر،مولانا اسلام الدین ،مولانا اسلم قادری، مولانا محمد حسین آزاد،قاری عبد الحکیم اطہر ودیگر بھی موجود تھے۔انہوں نے ملک بھر کے علماء،خطباء سے اپیل کی کہ وہ جمعہ 10جولائی کو ملک بھر میں جمعہ کے خطبات میں ’’اسلام کا پیغام امن و سلامتی ‘‘کو موضوع بنائیں اور عوام الناس کو اسلام کے حقیقی پیغام کو عام کرنے کی طرف توجہ دلائیں ۔انہوں نے کہا کہ آج امت مسلمہ جس زوال کا شکار ہے اس کا سبب قرآن وسنت کی تعلیمات سے دوری ہے جب تک قرآن وسنت کی تعلیمات کو عملی طور پر نہیں اپنایا جاتا اس وقت تک امت مسلمہ کے مسائل اور مصائب کا حل ممکن نہیں۔انہوں نے کہا کہ بیت المقدس کی آزادی اور ارض حرمین الشریفین کا تحفظ اور مسلمانوں کے مسائل کا حل باہمی اتحاد سے ہی ممکن ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1