اوور سیز پاکستانیوں کی جائیدادوں کے مسائل 6ماہ میں حل کرنے کا حکم

اوور سیز پاکستانیوں کی جائیدادوں کے مسائل 6ماہ میں حل کرنے کا حکم

لاہور(عامر بٹ سے)اورسیز پاکستانیوں کی جائیدادوں کو درپیش مسائل ،تنازعات،قبضے ،ریکارڈ میں درستگی اور پیچیدگیوس سے بھرے مسائل چھ ماہ میں حل کرنے کے احکامات جاری کر دیئے گئے ،سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب نے صوبے بھر کے ڈی سی اوز ،کمشنرز کو تحریری ہدائت جاری کر دی ،مزید معلوم ہوا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کی خصوصی ہدائت پر سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب ندیم اشرف نے پنجاب کے تمام ڈی سی اوز اور کمشنرز کو اورسیز پاکستانیوں کی جائیدادوں سے متعلق دائر کردہ کیسز نمپٹانے کیلئے چھ ماہ کا ٹائم فریم دے دیا ہے ،بیرون ملک اور سیز پاکستانیوں کی کثیر تعداد کی اپنے ملک میں خرچ کی گئی زند گی بھر کی جمع پونجی داؤ پر لگ چکی ہے اور لینڈ مافیا نے اوور سیز پاکستانیوں کی بیرون ملک موجودگی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ان کی جائیدادوں کے ریکارڈ میں ردوبدل کرتے ہوئے ناصرف ریکارڈ متنازعہ کر دیا ہے بلکہ قبضے کرتے ہوئے پختہ تعمیرات بھی مکمل کر لی ہیں جس کی اطلاعات پر وزیراعلیٰ پنجاب نے باقاعدہ ایک اوہرسیز کمیشن سیل بھی قائم کر دیا ہے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب ندیم اشرف نے اس حوالے سے پنجاب کے ڈی سی اوز اور کمشنرز صاحبان کو بھی تحریری آڈر نمبری73-paمورخہ 24 اپریل 2014 جاری کرتے ہوئے پابند کیا ہے کہ وہ اورسیز پاکستانیوں کے مسائل حل کروانے میں فوری دلچسپی لیں اور ان کی جائیدادوں کے تنازعات ،قبضے اور ریکارڈ میں درستگی سے لے کر ریونیو کورٹس میں زیر سماعت کیسز کے تحریری حتمی فیصلے بھی 6ماہ کے اندر سناتے ہوئے ان کی ہر ممکن داد رسی کریں اس کے علاوہ فیلڈ سٹاف سے بھی موقعہ قبضہ،نشاندہی اور گرداوری کے حوالے سے ریکارڈ اپ گریڈ کیا جائے سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب ندیم اشرف نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے آگاہی دی ہے کہ اورسیز پاکستانیوں کی جائیدادوں کو ہر صورت محفوظ بنائیں گے اور ان کو درپیش مسائل کا بھی ہنگامی بنیادوں پر ازالہ کیا جائے گا ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1