لکھوی کی رہائی پر چین کی حمایت ناقابل قبول، مودی کا واویلا

لکھوی کی رہائی پر چین کی حمایت ناقابل قبول، مودی کا واویلا
لکھوی کی رہائی پر چین کی حمایت ناقابل قبول، مودی کا واویلا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

یوفا/ روس / آستانہ (ویب ڈیسک) بھارتی وزیراعظم نریندر مودی گزشتہ روز قزاقستان کے دورے کے بعد روس کے شہر یوفا پہنچے جہاں وہ نئے ابھرتی اقتصادی ممالک کی تنظیم برعکس کے کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ اس موقع پر چین کے صدر ژی جن پنگ سے ملاقات کے دوران انہوں نے پاکستانی میں اقتصادی راہداری منصوبے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ لکھوی کی رہائی پر اقوام متحدہ میں بیجنگ کی پاکستان کی حمایت ناقابل قبول ہے۔ چینی صدر نے بھارتی وزیراعظم کو مشورہ دیا کہ دونوں ممالک کو لکھوی اور دہشتگردی کے ایشو پر مذاکرت میں ”توسیع“ دینی چاہیے تھی۔ اس موقع پر بھارتی وزیراعظم مودی اور چینی صدر کے درمیان 85 منٹ تک کی طویل ملاقات ہوئی جس میں دو طرفہ تعلقات سمیت تمام پہلوﺅں پر تفصیلی بات کی گئی۔ یاد رہے اقوام متحدہ میں پاکستان کی طرف سے ذکی الرحمن لکھوی کی رہائی پر بھارت کی طرف سے آنیوالی تحریک کو چین نے روک دیا تھا۔ قبل ازیں قزاقستان کے دارالحکومت آستانہ میں بھارتی وزیراعظم مودی نے قازق صدر نور سلطان نذر بابوف سے ملاقات کی۔ اس موقع پر دونوں ممالک کے مابین ایک معاہدے پر دستخط کئے گئے جس میں قزاقستان اگلے پانچ برسوں مین بھارت کو 5 ہزار ٹن یورینیم فراہم کرے گا۔ معاہدے کے تحت قزاقستان بھارت کو 2015ءسے 2019ءتک 5 ہزار ٹن یورینیم توانائی کے شعبے کیلئے فراہم کرے گا۔