سرینگر: وانی کی شہادت کے بعد مظاہرے پھوٹ پڑے، بھارتی فوج کی فائرنگ سے 12کشمیری شہید، 200سے زائد زخمی

سرینگر: وانی کی شہادت کے بعد مظاہرے پھوٹ پڑے، بھارتی فوج کی فائرنگ سے 12کشمیری ...
سرینگر: وانی کی شہادت کے بعد مظاہرے پھوٹ پڑے، بھارتی فوج کی فائرنگ سے 12کشمیری شہید، 200سے زائد زخمی

  

سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک)سرینگرمیں کشمیریوں کے اہم رہنما برہان وانی کی شہادت کے بعد وادی میں مظاہرے پھوٹ پڑے۔ ان کے جنازے کے موقع پر وادی کے مختلف حصوں میں قابض فوج کی فائرنگ سے 12 کشمیری شہید اور200سے زائد زخمی ہوگئے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ روز کوکرناگ میں قابض بھارتی فوج کے ہاتھوں نوجوان حریت پسند کمانڈر برہان وانی اپنے دو ساتھیوں سمیت شہید ہوگئے تھے جس کے بعد سے مقبوضہ وادی میں میں شدید اشتعال پایاجاتا ہے ۔ جب آبائی قصبے ترال سے ان کا جنازہ اٹھایا گیا تو اس میں ہزاروں کشمیریوں نے شرکت کی ۔اس دوران پوری وادی میں بھارت مخالف ریلیاں بھی نکالی گئیں جس پر قابض بھارتی فوج نے فائرنگ کی۔اس موقع پر حریت رہنماو¿ں سیدعلی گیلانی، یاسین ملک، شبیرشاہ اورمیرواعظ عمرفاروق کو گھروں میں نظربند کرکے احتجاج کو غیرموثر کرنے کے لیئے انٹرنیٹ کی سہولت بھی معطل کردی گئی ۔ حالات کے پیش نظریونیورسٹی اور کالج کے امتحانات بھی ملتوی کردیئے۔علی گیلانی،  میر واعظ عمر فاروق اور دوسرے حریت رہنماوں نے برہان وانی کی شہادت پر دو روزہ ہڑتال کی کال دی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -