پولیس کی تربیتی کشتی دریائے سندھ میں ڈوب گئی، 3اہلکار طوفانی لہروں کی نذر، 3بچا لئے گئے

پولیس کی تربیتی کشتی دریائے سندھ میں ڈوب گئی، 3اہلکار طوفانی لہروں کی نذر، ...

ڈیرہ غازی خان (نمائندہ خصوصی )دریائے سندھ میں پولیس کی تربیتی کشتی چھ اہلکاروں سمیت ڈوب گئی ،تین جوانوں کو زندہ بچا لیاگیا جبکہ تین اہلکار دریائے سندھ کی طوفانی لہروں میں لا پتہ ہو گئے ،تفصیل کے مطابق ڈیرہ غازی خان کے نواحی علاقہ دراہمہ میں غازی گھاٹ کے مقام پنجاب پولیس کے اہلکار دریائے سندھ میں تربیتی مشق کر رہے تھے کہ اچانک کشتی بجلی کے ہائی ٹرانشمشن لائن کے پول سے جا ٹکرائی ، جس کے باعث کشتی بے قابو ہو کر الٹ گئی اور کشتی میں سوار چھ پولیس اہلکار ہیڈ کانسٹیبل اسلم ، کانسٹیبل تیمور نواز ، کانسٹیبل علی ،کشتی ڈرائیو بلال ، انیس اور اعجاز دریائے میں ڈوب گئے ، پولیس اہلکار وں کی کشتی کو ڈوبتا دیکھ کر قریبی ملاحوں اور غوطہ خوروں نے بروقت پہنچ کر تین اہلکاروں بلال ، انیس اور اعجاز کو زندہ بچا لیا جنھیں ٹیچنگ ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ منتقل کر دیا گیا ، تاہم اسلم ، تیمور نواز اور علی دریائے سندھ کی طوفانی لہروں میں لاپتہ ہو گئے ، واقعہ کی اطلاع ملنے پر ریسکیو 1122، پولیس کے غوطہ خور موقع پر پہنچ گئے اور ڈوبنے والوں کی تلاش شروع کر دی ۔ تاہم اندھیرا چھا جانے کی وجہ سے ریسکیو آپریشن روک دیا گیا اور امکان یہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ تینوں اہلکار دریائے کی طوفانی لہروں کی نظر ہو گئے ، دریں اثناء آر پی او رحمت اللہ نیازی ، ڈپٹی کمشنر ڈیرہ اللہ رکھا انجم ، ڈی پی او ڈیرہ احمد نواز چیمہ ،ڈسٹرکٹ ریسکیو آفیسر ناطق حیات سمیت دیگر متعلقہ افسران بھی موقع پر پہنچ گئے اور ریسکیو انتظامات کا جائزہ لیا ۔ جبکہ دوسری طرف واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ غازی خان میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے تمام ڈاکٹروں کو الرٹ رہنے کا حکم دیدیا گیا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر