عمران خان پختونوں کے کندھوں پر سوار ہو کار اقتدار حاصل کرنا چاہتے ہیں:ایوب خان

عمران خان پختونوں کے کندھوں پر سوار ہو کار اقتدار حاصل کرنا چاہتے ہیں:ایوب ...

پشاور( پ ر)عوامی نیشنل پارٹی صوبہ خیبر پختونخوا کے نائب صدر ایوب خان اور ضلعی جنرل سیکرٹری و سابق ایم پی اے رحمت علی خان نے کہا ہے کہ صوبہ خیبر پختونخوا کے بجٹ کا زیادہ حصہ دھرنوں پر خرچ کیا جا رہا ہے ، سی پیک منصوبے میں پختونخوا کو نظر انداز کیا گیا ، عمران خان پختونوں کے کندھے پر پاؤں رکھ کر اسلام آباد کے کرسی اقتدار تک پہنچنا چاہتے ہیں ، پنجاب ا ور کراچی میں بسنے والے پختونوں کیلئے عوامی نیشنل پارٹی نے آواز اُٹھائی اور ملاکنڈ ڈویژن میں کسٹم ایکٹ کیخلاف سیسہ پلائی دیواربنی ، پختونوں کی بیداری وقت کا تقاضہ ہے اور پختونوں کی نمائندہ جماعت صرف عوامی نیشنل پارٹی ہے ، ملک کی بقاء کی خاطر ہم پاک فوج کے شانہ بشانہ ہے کنٹونمنٹ کیلئے اراضیات کے عوض قوم کو مارکیٹ ریٹ پرمعاوضے دئیے جائیں ، سوات کے عوام پہلے سے دہشت گردی ، سیلاب اور زلزلوں کے باعث متاثرہ ہے وہ مزید بوجھ برداشت نہیں کر سکتے ، سوات میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ امیر مقام کی ایماء پر ہو رہی ہے بانڈئ فیڈر پر کام شروع کیا جائے ،صوبہ خیبر پختونخوا نیشنل گرڈ کو 4 ہزار میگا واٹ بجلی فراہم کر رہا ہے اور ہمیں صرف 800میگا واٹ بجلی دی جا رہی ہے جس کے باعث اضافی لوڈ شیڈنگ عوام پر مسلط کیا گیا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے کوزہ بانڈئ کے علاقہ سیگرام میں ایک شمولیتی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف کے ویلج نائب ناظم بہادر خان سینکڑوں ساتھیوں سمیت پی ٹی آئی سے مستعفی ہو کر اے این پی میں شامل ہوئے ، تقریب سے عوامی نیشنل پارٹی کے ضلعی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ابراہیم دیولئی ، ضلعی رہنما عبد الصبور خان ، شیر شاہ خان آف کوزہ بانڈئ ، تحصیل صدر ذہین خان ، شوکت علی خان ، آفرین خان ، این وائی او کے ضلعی صدر حیدر علی شاہ ، جنرل سیکرٹری مراد علی خان ، ابراہیم گل دان اور ویلج ناظم ننگولئی فتح اللہ خان نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا کہ برسراقتدار سیاسی جماعتوں نے عوام کو مایوسی کے سوا کچھ نہیں دیا ، موجودہ ممبران اسمبلی کی نا اہلی کے باعث آج عوام مختلف مسائل و مشکلات کا شکار ہیں 2018میں ملک بھر سے بجلی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا نعرہ لگانے والے عوام کو بے وقوف بنا رہے ہیں 2013کے عام انتخابات میں بھی ن لیگ کا یہی نعرہ تھا انہوں نے کہا کہ سوات میں بجلی لوڈ شیڈنگ کی ذمہ دار صوبائی حکومت اور امیر مقام ہے 18ویں ترمیم کے بعد بجلی صوبے کی ذمہ داری بنتی ہے عوامی نیشنل پارٹی کے دور حکومت میں چترال ، دیر ، بحرین ، مٹلتان میں ہائیڈل پاور پراجیکٹ کے سنگ بنیاد رکھے گئے لیکن موجودہ حکومت نے اس اہم میگا پراجیکٹس کو بند کیا اور بجٹ میں فنڈ نہیں رکھا گیا اس سال کے صوبائی بجٹ میں ٹیچنگ ہسپتال سوات کیلئے ایک روپے کا فنڈ نہیں رکھا گیا ہے جو ہمارے ممبران اسمبلی کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے انہوں نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی نے اپنے دور حکومت میں دہشت گردی کا مردانہ وار مقابلہ کیا سیلاب سے تباہ رابطہ پلوں اور سڑکوں کو تعمیر کیا دہشت گردی سے تباہ ہونے والے انفراسٹرکچر کو بحال کیا پختونخوا پولیس اور اساتذہ کو ترقیاں دیں اور ان کی تنخواہیں بڑھائی اگر دوبارہ اے این پی کی حکومت آئی تو پولیس اور اساتذہ کو ڈبل پروموشن اور تنخواہیں دینگے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر