بچے کو اُٹھا کر بازار میں پھرنے والی یہ عورت دراصل کون ہے؟ حقیقت جان کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے

بچے کو اُٹھا کر بازار میں پھرنے والی یہ عورت دراصل کون ہے؟ حقیقت جان کر آپ بھی ...
بچے کو اُٹھا کر بازار میں پھرنے والی یہ عورت دراصل کون ہے؟ حقیقت جان کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے

  


بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ روز عراقی شہر موصل میں ایک خودکش حملے میں 2فوجی جاں بحق اور کئی شہری زخمی ہو گئے تھے۔ اب اس حملہ آور کی حملے سے چند لمحے لی گئی تصویر منظرعام پر آ گئی ہے جس عراقی حکومت کو دہلا کر رکھ دیا ہے کہ داعش کن لوگوں کو خودکش حملوں میں استعمال کر رہی ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق یہ حملہ آور ایک خاتون تھی جس نے گود میں ایک معصوم بچہ بھی اٹھا رکھا تھا۔

اس تصویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ خاتون موصل سے فرار ہونے والے شہریوں میں شامل ہو کر جا رہی تھی اور یوں ظاہر کر رہی تھی کہ گویا وہ بھی شہر میں جاری لڑائی سے بچ کر جا رہی ہے لیکن جیسے ہی وہ گلی میں کھڑے فوجیوں کے قریب پہنچی، اس نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا، جس میں وہ اور اس کی گود میں موجود بچہ بھی جاں بحق ہو گئے۔واضح رہے کہ یہ خوفناک حملہ ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب عراقی حکومت موصل شہر میں داعش کے خلاف اپنی فتح کا اعلان کرنے والی ہے۔

مزید : عرب دنیا