چین کے ساتھ متوازن بنیادوں پر تجارت کی جائے، فلور ملرز

چین کے ساتھ متوازن بنیادوں پر تجارت کی جائے، فلور ملرز

لاہور ۔ (کامرس ڈیسک )پاکستان فلور ملز ایسوسی ایشن کے رہنما میاں ریاض احمد نے کہا ہے کہ چائنہ کو ایسٹ انڈیا کمپنی بنانے کی بجائے متوازن بنیادوں پر تجارت کی جائے۔ چائنہ کے ساتھ ہونے والی تجارت میں سب سے زیادہ زرمبادلہ چائنہ کو حاصل ہوتا ہے جبکہ اس کے مقابلے میں پاکستانی مصنوعات کی چائنہ کو ایکسپورٹ نہ ہونے کے برابرہے ۔پاکستانی معیشت کی بحالی کیلئے برآمدات کو بڑھانا اور ہر قسم کی غیر ضروری درآمدات میں کمی لانا ہوگی ۔ یہ بات پی ایف ایم اے کے رہنما میاں ریاض نے گزشتہ روز ایک نجی تقریب کے دوران صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ میاں ریاض نے کہاکہ غیریقینی حالات اور سیاسی عدم استحکام کے باعث اس وقت پاکستانی معیشت شدید دباؤ کا شکار ہے ،زرمبادلہ کے ذخائر حد سے زیادہ کم ہو چکے ہیں جبکہ ہماری درآمدات کا گراف 55 بلین ڈالر سے اوپر جا چکا ہے اور برآمدات 19 بلین سے بھی نیچے گر چکی ہیں جو انتہائی قابل تشویش امر ہے ۔ میاں ریاض نے کہاکہ حکومت کو ڈالر کی پرواز کو بھی روکنا ہوگا کیونکہ ڈالر کی قیمت میں اضافے کے باعث نہ صرف غیر ملکی قرضوں میں گئی گنا اضافہ ہو گیا ہے جبکہ ڈالر سے جڑی تمام اشیاء کی قیمتیں میں بھی کئی گنا اضافہ ہو چکا ہے ،جس کے باعث کاسٹ آف پراڈکشن بڑھنے سے مقامی انڈسٹری میں تیار ہونے والی مصنوعات کی قیمتیں عالمی منڈی میں مقابلہ نہیں کر سکتی ہیں۔لہذا نگران حکومت کوچاہیے کہ وہ بلاجواز مہنگائی کو بڑھنے سے روکے اور غیر قانونی طور پر خود ساختہ مہنگائی کرنے والے مافیا کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے تاکہ عوام پر مہنگائی کے عذاب سے نکالا جا سکے۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کرنے پر نگران حکومت کے بے حد مشکور ہیں

مزید : کامرس