جدید پیداواری ٹیکنالوجی کاشتکاروں تک پہنچانے کیلئے حکومتی اقدامات جاری

جدید پیداواری ٹیکنالوجی کاشتکاروں تک پہنچانے کیلئے حکومتی اقدامات جاری

لاہور(پ ر) نگران صوبائی وزیر زراعت ، خوراک، پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ سردار تنویر الیاس خان نے کہا ہے کہ تحقییق کے بغیر کسی بھی فیلڈ میں ترقی ناممکن ہے۔فصلوں کی جدید تحقیق اوراس کے ثمرات کاشتکاروں کی دہلیز تک پہنچانے میں حکومت پنجاب تمام ممکنہ وسائل بروئے کار لارہی ہے۔جدیدتحقیق کے بہتر نتائج صرف اسی صورت میں برآمد ہوسکیں گے جب ہمارے کاشتکاراسے اپنانے میں دلچسپی لیں گے اور محکمہ زراعت کے فیلڈ عملہ کی سفارشات پر عمل کریں گے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کاٹن ریسرچ انسٹی ٹیوٹ ملتان کے دورہ کے دوران فیلڈ ٹرائلز کے معائنہ کے موقع پر کیا۔اس موقع پر وائس چانسلر محمد نواز شریف زرعی یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر آصف علی، ڈائریکٹر جنرل زراعت (توسیع) سید ظفر یاب حیدر،ڈاکٹر صغیر احمد ڈائریکٹر کاٹن سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا تحقیق سوشل سٹیٹس کے ساتھ لنک ہوگی تو فائد مند ہوگی۔انہوں نے مزید کہا کہ زرعی اجناس کے مارکیٹنگ سسٹم میں بہتری لانے کیلئے ہم روڈمیپ دیکر جائینگے تاکہ کاشتکاروں کوان کی پیدا کی گئی اجناس سے زیادہ منافع حاصل ہوسکے۔

سسٹم میں بہتری لانے کیلئے مڈل مین کے کردار کو ختم کرنے اور ویلیو ایڈیشن کے ذریعے کئی گنا زائد قیمتیں حاصل کرنے بارے بھی تجاویز مرتب کی جارہی ہیں تاکہ زرعی معیشت میں بہتری لائی جاسکے۔انہوں نے مزید کہا کہ محکمہ زراعت بہت کام کر رہا ہے اور کاشتکاروں کے ساتھ قریبی روابط میں ہے۔بعد ازاں انہوں نے ملتان،بہاول پور،ڈیرغازیخان اورساہیوال ڈویژن کے محکمہ خوراک کے ڈویژنل وضلعی افسران کے اجلاس کی صدارت کی۔اس موقع پر انہوں نے اجلاس کے شرکاء کو ہدایت دی کہ وہ بارشوں اور سیلاب کے سیزن کے دوران کھلے آسمان تلے پڑی گندم کو محفوظ بنانے میں تمام تر حفاظتی اقدامات بروئے کار لائیں تاکہ سٹاک شدہ گندم کی کوالٹی خراب نہ ہو۔انہوں نے مزید کہا کہ مارکیٹ میں گندم اور آٹے کی قیمتیں باقاعدگی سے مانیٹر کی جائیں اور ان کی ر پورٹ ہفتہ وار اپ ڈیٹ کی جائے۔انہوں نے کہا کہ ہماری بھرپور کوشش ہے کہ عام صارفین کو مناسب قیمتوں پر آٹے کی دستیابی یقینی بنائی جائے۔

مزید : کامرس