عدلیہ اور نیب کا سیاست زدہ ہو جانا المیہ ہے، اویس نورانی

عدلیہ اور نیب کا سیاست زدہ ہو جانا المیہ ہے، اویس نورانی

لاہور (سٹی رپورٹر) جمعیت علماء پاکستان کے مرکزی سیکریٹری جنرل اور متحدہ مجلس عمل کے ترجمان صاحبزادہ شاہ محمد اویس نورانی نے کہا ہے کہ عدلیہ اور نیب کا سیاست زدہ ہو جانا المیہ ہے۔ جمہوری قوتیں سول بالادستی کے لئے متحد ہو جائیں۔ خفیہ طاقتیں خطرناک کھیل کھیل رہی ہیں۔ سیاست میں اسٹیبلشمنٹ کی مداخلت جمہوری اصولوں کے منافی ہے۔ مخصوص جماعت کی کامیابی یقینی بنانے کے لئے انتظامات کئے جا رہے ہیں۔ انتخابات متنازعہ ہوئے تو ملک نئے بحران میں پھنس جائے گا۔ عدلیہ، نیب اور خفیہ طاقتوں کے خلاف عوام کا بڑھتا اور پھیلتا غم و غصہ طوفان کی شکل اختیار کر سکتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے متحدہ مجلس عمل پنجاب کے عہدیداران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ شاہ اویس نورانی نے کہا کہ قوم ووٹ کی طاقت سے خفیہ ہاتھوں کا پلان ناکام بنائیں۔ الیکشن کمیشن پری پول رگنگ کا نوٹس لے۔ کنگ پارٹی کی خوش فہمی 25 جولائی کو دور ہو جائے گی۔

جیپ کے نشان والے غیر جمہوری قوتوں کے ایجنٹ ہیں۔ متحدہ مجلس عمل کی انتخابی مہم جوش و جذبے کے ساتھ جاری ہے۔ قوم نظام مصطفے کے حامی امیدواروں کو کامیاب کروائے تاکہ پارلیمنٹ میں قرآن اور ایمان کی آواز گونج سکے۔ کتاب کا نشان کامیابی اور شعور کا نشان ہے۔ ہماری سیاست کرسی اور کمیشن کے لئے نہیں نظام مصطفے کے لئے ہے۔ شرعی نظام کا نفاذ ہی ملک کو بحرانوں اور قوم کو مایوسی سے نکال سکتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4