این اے 64 سے سردار غلام عباس اور پی پی 23 سے آفتاب اکبر انتخابات کی دوڑ سے باہر ،سپریم کورٹ نے درخواست مسترد کر دی

این اے 64 سے سردار غلام عباس اور پی پی 23 سے آفتاب اکبر انتخابات کی دوڑ سے باہر ...
این اے 64 سے سردار غلام عباس اور پی پی 23 سے آفتاب اکبر انتخابات کی دوڑ سے باہر ،سپریم کورٹ نے درخواست مسترد کر دی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان تحریک انصاف کے پی پی 23 چکوال سے امیدوار سردار آفتاب اکبر اور این اے 64 سے آزاد امیدوار سردار غلام عباس کی انتخابی عذرداری کی درخواست مسترد کر دی ہے جس کے بعد دونوں امیدوار الیکشن 2018 کی دوڑ سے باہر ہو گئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق سردار غلام عباس نے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا تاہم ان کی درخواست مسترد کر دی گئی ہے ۔سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ان کا تو انکم ٹیکس رکارڈ ہی نہیں ہے جس پر وکیل کامران مرتضیٰ کا کہناتھا کہ انکم ٹیکس رکارڈ تو اس لیے نہیں ہے کہ آمدن ہی نہیں ہے،جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ اگر آمدن نہیں ہے تو الیکشن کیسے لڑیں گے۔جسٹس اعجاز الحسن کا کہناتھا کہ آپ نے جائیداد بھی ظاہر نہیں کی ۔ کامران مرتضیٰ نے جواب دیا کہ تمام جائیداد ظاہر کی ہے یہ وراثتی جائیداد ہے ۔چیف جسٹس نے کہا کہ آپ کے موکل کا تو این ٹی این نمبر ہی نہیں ہے،افسوس ہے کہ ہمارے عوامی نمایندے اعلیٰ معیار پر مشکل سے پورا اترتے ہیں۔ سپریم کورٹ کی جانب سے درخواست مستر دکر دگئی ہے اور عدالت کا کہناتھا کہ وجوہات تفصیلی فیصلے میں بتائی جائیں گی ۔

مزید : اہم خبریں /قومی