الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی امیدوار کے پوسٹر پر چیف جسٹس اور آرمی چیف کی تصاویر لگانے کے معاملے پر فیصلہ محفوظ کر لیا

الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی امیدوار کے پوسٹر پر چیف جسٹس اور آرمی چیف کی تصاویر ...
الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی امیدوار کے پوسٹر پر چیف جسٹس اور آرمی چیف کی تصاویر لگانے کے معاملے پر فیصلہ محفوظ کر لیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)الیکشن کمیشن نے این اے 80 گوجرانوالہ سے پی ٹی آئی کے امیدوار کے پوسٹر پر چیف جسٹس اور آرمی چیف کی تصاویر لگانے پر فیصلہ محفوظ کر لیا جو کچھ دیر میں سنایا جائیگا ۔

تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سردار رضا حیات کی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ نے این اے 80 گوجرانوالہ سے پی ٹی آئی کے امیدوار کے پوسٹر پر چیف جسٹس اور آرمی چیف کے تصاویر لگانے کے معاملے کی سماعت کی،پی ٹی آئی امیدوارناصرچیمہ اوران کے وکیل گوہرعلی خان الیکشن کمیشن کے سامنے پیش ہوئے ،چودھری ناصر چیمہ کے وکیل نے الیکشن کمیشن میں جواب جمع کرا دیا۔

ناصر چیمہ کے وکیل نے جواب میں کہا ہے کہ یہ میری الیکشن مہم سے متعلق پوسٹر نہیں ہے، پوسٹر پرآرمی چیف اور چیف جسٹس کی تصاویرایڈٹ کی گئی ہیں،وکیل گوہر علی خان نے کہا کہ جسٹس اعجازالاحسن کے گھر پرفائرنگ کے بعدیہ پوسٹر ان کے حق میں لگایا گیا تھا۔

ممبرسندھ عبدالغفارسومرو نے استفسار کیا کہ جسٹس اعجاز الاحسن کی پوسٹر پر تصویر لگائی گئی ہے،

چیف الیکشن کمشنرنے کہا پہلے ناصر چیمہ نے کہا تھا کہ الیکشن شیڈول سے پہلے پوسٹرچھاپا گیا تھا،انہوں نے کہا کہ کیا فوج اور عدلیہ کو آپ کی ہمدردی کی ضرورت ہے؟۔

الیکشن کمیشن نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا جوکچھ دیر میں سنایا جائے گا

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد