لودھراں میں ن لیگ کے ضلعی صدر تحریک انصاف میں شامل

09 جولائی 2018 (12:25)

لودھراں (ویب ڈیسک) لودھراں میں مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر 20سالہ رفاقت چھوڑ کر تحریک انصاف میں شامل ہوگئے۔

روزنامہ جنگ کے مطابق اتوار کی رات تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین ، این اے 161سے پی ٹی آئی کے امیدوار شفیق ارائیں ، پی پی 227 کے امیدوار نواب امان اللہ کے ہمراہ مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر طاہر امیر غوری کی رہائشگاہ پر آئے جہاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے طاہر امیر غوری نے کہا کہ برے حالات میں جب نواز شریف جیل میں تھے اور پھر جدہ چلے گئے اور ٹکٹ لینے والا بھی کوئی نہ تھا اس وقت پارٹی کا جھنڈا اٹھائے رکھا لیکن پارٹی اور مقامی قیادت نے مجھے ہمیشہ نظر انداز کیا جس پر دلبرداشتہ ہو کر میں 20سالہ رفاقت جھوڑ کر تحریک انصاف میں شامل ہو رہا ہوں۔ جہانگیر ترین نے طاہر امیر غوری کو پی ٹی آئی کا روایتی مفلر پہنا کر خو ش آمدید کہا جس کے بعد اپنے خطاب میں جہانگیر ترین نے کہا کہ نواز شریف مریم نواز اور کیپٹن (ر)صفدر نیب کے سزا یافتہ مجرم ہیں ، 9مہینے کے ٹرائل کے بعد ریلی نکال کر عوام کو کیا دکھانا چاہتے ہیں ریلی نکالنے کے بجائے اگلی عدالت میں جائیں اور اپیل کریں۔ 25تاریخ ہی وہ دن ہے جب پاکستان کی تقدیر بدلے گی۔ ہماری جدوجہد کے نتیجے میں نواز شریف فارغ ہوا بہت اچھی روایت ہے کہ طاقتور کا احتساب ہوا۔

انہوں نے کہا کہ کراچی کا ایک بہت بڑا سکینڈل سامنے آیا ہے ، جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے اربوں روپے ماہر بھیجے گئے جسکے بارے میں خبر ہے کہ وہ آصف علی زرداری اور انکی بہن کا پیسہ ہے ، اگر یہ لوٹ مار ختم ہوجائے تو ہمارا ملک ایک خوشحال ملک بن سکتا ہے ، ہم نیا معاشرہ اور پاکستان تشکیل دیں گے اداروں کو مضبوط اور کامیاب بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کے خلاف آشیانہ اور صاف پانی کے بہت بڑے سکینڈل میں ، شہباز شریف کے خلاف الیکشن کی وجہ سے کارروائی معطل کی گئی۔ فواد حسن فواد اور احد چیمہ گرفتار ہوگئے ہیں دونوں بولیں گے کہ کس کے کہنے پر کرپشن کی۔

مزیدخبریں