نیب نے 4محکموں سے لاہور میٹروبس کے پیکیج ٹو اور تھری کی تفصیلات مانگ لیں 

نیب نے 4محکموں سے لاہور میٹروبس کے پیکیج ٹو اور تھری کی تفصیلات مانگ لیں 

  

لاہور(آئی این پی) میٹروبس لاہورمیں کرپشن کی کھوج کیلئے نیب لاہور نے مزید ریکارڈ طلب کرلیا، نیب لاہور کاپی اینڈ ڈی بورڈ(بقیہ نمبر38صفحہ12پر)

، محکمہ ہاوسنگ، ایل ڈی اے اور محکمہ ٹرانسپورٹ کومراسلہ جاری، صوبائی اداروں کو میٹروبس کے پیکیج ٹو او ر پیکیج تھری کی تفصیلات 18 جولائی تک جمع کروانے کی ہدایت۔سابق دور ِحکومت میں شہریوں کیلئے پبلک ٹرانسپورٹ کی بہترین سہولیات کی فراہمی کیلئے میٹروبس لاہورکا منصوبہ بنایا گیا تھا جس پردستاویزات کے مطابق 29  ارب روپے خرچ کیے گئے، میٹروبس منصوبے پر متعدد بارانکوائریاں کی گئیں لیکن اب نیب لاہور نے صوبائی اداروں سے منصوبے کی فزیبلٹی، منظور کیے گئے پی سی ون اور منٹس آف میٹنگ کاریکارڈ طلب کیا ہے۔نیب کی جانب سے منصوبے کوایک پی سی ون کی بجائے زیادہ پی سی ون منظورکرنے سے متعلق بھی جواب طلب کیا گیا ہے جب کہ دستاویزات میں خصوصی طورپر پیکیج ٹو اور تھری کا ریکارڈ طلب کیا گیا ہے، ذرائع نے بتایا ہے کہ پیکیج ٹو کلمہ چوک تاقرطبہ چوک 4.3 کلومیٹر کا تھا جس پر5 ارب 48 کروڑ کے اخراجات آئے تھے جبکہ پیکیج تھری میں قرطبہ چوک تا ایم اے او کالج 2.15 کلومیٹر کی تعمیرپر 5 ارب 14 کروڑکی لاگت تھی۔

میٹرو بس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -